کیاتحریک انصاف کے تمام وزراء، ارکان اسمبلی اور سینیٹرز فارغ ہوجائیں گے؟سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن نے بڑا دعویٰ کردیا

کیاتحریک انصاف کے تمام وزراء، ارکان اسمبلی اور سینیٹرز فارغ ہوجائیں گے؟سابق ...
کیاتحریک انصاف کے تمام وزراء، ارکان اسمبلی اور سینیٹرز فارغ ہوجائیں گے؟سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن نے بڑا دعویٰ کردیا

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن کنور محمد دلشاد نے کہاہے کہ الیکشن کمیشن الیکشن ایکٹ 2017 کے تحت فارن فنڈنگ ثابت ہونے پر تحریک انصاف کو کالعدم قراردے سکتاہے ، ایسا ہوا تو تمام وفاقی و صوبائی وزرا، ارکان اسمبلی اور سینیٹرز فارغ ہوجائے گے ۔

جیونیوز کے پروگرام ”کیپٹل ٹاک“میں گفتگو کرتے ہوئے سابق سیکرٹری الیکشن کمیشن کنور محمد دلشاد نے کہا کہ تحریک انصاف کوپتہ چل چکاہے کہ ان کی جانب سے غلطی ہوئی ہے اور وہ قانون کی خلاف ورزی کرچکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کیس میں قانون کے مطابق کارروائی ہوئی تو ساری پارٹی کالعدم قراردیدی جائے گی جس سے تمام وزراءاور ارکان بھی فارغ ہوجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ الیکشن ایکٹ 2017میں صاف لکھا ہوا ہے کہ اگر الیکشن کمیشن یہ بات قراردے دیتاہے کہ کسی نے فارن فنڈنگ استعمال کرکے پارٹی بنائی ہے تو حکومت اس پارٹی کو کالعدم قراردینے پر مجبور ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ فارن فنڈنگ کی بنیاد پر کھڑی پارٹی کیخلاف اگر الیکشن کمیشن آرڈرپاس کردے تو پھر اس پارٹی کے تمام وفاقی و صوبائی وزراء، ارکان اسمبلی ، سینیٹر ز حتیٰ کہ لوکل نمائندے بھی فارغ ہوجائیں گے ۔

مزید : قومی