چترال میں سیلاب سے متاثرہ انفراسٹر کچر کی بحالی کے لئے فنڈز کی منظوری 

  چترال میں سیلاب سے متاثرہ انفراسٹر کچر کی بحالی کے لئے فنڈز کی منظوری 

  

 پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیر زادہ نے ضلع اپر و لوئر چترال میں سیلاب سے متاثرہ علاقوں اور انفراسٹرکچر کی فوری بحالی اور تعمیر کے لئے 539.29 ملین روپے کی فنڈز کی منظوری پر وزیراعلی خیبرپختونخوا محمود خان کا خصوصی شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا ہے کہ فنڈز کی منظوری سے اپر اور لوئر چترال میں بحالی کا کام جلد شروع کیا جائے گا، انہوں نے ضلع چترال کے عوام کی جانب سے بھی صوبائی حکومت کا خصوصی شکریہ ادا کیا ہے۔ واضح رہے کہ ضلع چترال میں حالیہ سیلاب سے اپر اور لوئر چترال کے کئی علاقوں میں انفراسٹرکچر کو نقصان پہنچا تھا جبکہ وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے سیلاب سے متاثرہ علاقوں کے دورے کے دوران تمام تر نقصانات کا بذاتِ خود جائزہ لیا تھا اور متاثرہ انفراسٹرکچر کی بحالی کے لئے فنڈز دینے کا اعلان بھی کیا تھا جس کو آج تحریک انصاف کی صوبائی حکومت نے فنڈز منظور کر کے عملی جامہ پہنایا ہے۔ تفصیلات کے مطابق  کل منظور شدہ بحالی کے فنڈز میں سے 22.2 ملین روپے مختلف واٹر سپلائی سکیمز کے لئے مختص کئے گئے ہیں جبکہ 132.84 ملین روپے پروٹیکشن والز کی چینلائزیشن کے لئے مختص کئے گئے ہیں۔ اسی طرح منظور شدہ فنڈز میں اپر اور لوئر چترال میں مواصلاتی نظام کی بحالی بھی شامل ہیں جس کے لئے 384.25 ملین روپے مختص کیے گئے ہیں۔اس موقع پر معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیر زادہ کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت دیگر اضلاع سمیت پسماندہ اضلاع کی ترقی اور خوشحالی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے، انہوں نے کہا کہ ضلع چترال کا شمار پسماندہ اضلاع میں ہوتا ہے، موجودہ صوبائی حکومت ضلع چترال کی بحالی اور ترقی کے لئے عملی اقدامات اٹھا رہی ہے

مزید :

پشاورصفحہ آخر -