پاکستان روس تکنیکی کمیٹی کا سہ روزہ اجلاس اختتام پذیر،توانائی کے شعبے میں دو طرفہ تعاون کے فروغ پر اتفاق

پاکستان روس تکنیکی کمیٹی کا سہ روزہ اجلاس اختتام پذیر،توانائی کے شعبے میں ...

  

  اسلا م آباد (آئی این پی)وزارت توانائی(پیٹرولیم ڈویژن)اور روسی فیڈریشن کی وزارت توانائی کی مشترکہ پاک روس تکنیکی کمیٹی کا پہلا باضابطہ 3روزہ اجلاس اسلام آباد میں ہوا،16سے 18نومبر تک جاری رہنے والے اجلاس کے بعد مشترکہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ سہ روزہ اجلاس میں شمالی گیس پائپ لائن منصوبے میں پیشرفت پر تفصیلی مشاورت کی گئی۔ گیس پائپ لائن منصوبہ دونوں ممالک کے اداروں کے درمیان فلیگ شپ سٹرٹیجک منصوبہ ہے جس سے طویل المدتی پاک۔روس دوطرفہ تعلقات کے ساتھ ساتھ عوامی رابطوں کو فروغ دینے میں تقویت کا باعث بنے گا۔اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ اعلی سطح پر ہونے والی بات چیت کا مقصد پورٹ قاسم کراچی سے پنجاب کے علاقے قصور تک ہائی پریشر گیس پائپ لائن کے توسیعی منصوبے کی تکمیل کے حوالے سے تمام امور کو حتمی شکل دینا تھا تاکہ ملک کے شمالی علاقوں کی صنعتوں اور شہریوں کو درپیش گیس کی قلت اور گیس کی بڑھتی ہوئی طلب کو پورا کرنے کے لئے آر این ایل جی کو ان علاقوں تک بڑھایا جا سکے۔  اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر برائے توانائی عمر ایوب خان نے شمال۔جنوب گیس پائپ لائن منصوبے پر تیزی سے عملدرآمد کے لئے بین الحکومتی معاہدے کو دستاویزی شکل دینے کے حوالے سے تکنیکی کمیٹی کے شرکاکی کوششوں کی تعریف کی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان،روس کے ساتھ باہمی اور سٹرٹیجک تعلقات کو مضبوط ومستحکم بنانے کے لئے یہ منصوبہ پہلا اقدام ہے۔ وفاقی وزیر عمر ایوب نے توقع ظاہر کی کہ اس منصوبے کی تکمیل سے نہ صرف دونوں ممالک کو فائدہ ہوگا بلکہ آنے والے دنوں میں بھی اس منصوبے کے دوطرفہ تعلقات پر مثبت اثرات مرتب ہوں گے۔ 

پاک روس کمیٹی

مزید :

صفحہ اول -