ایس ای سی پی نے پہلے ’پیر ٹوپیر‘ لینڈنگ پلیٹ فارم کی منظور ی دیدی

  ایس ای سی پی نے پہلے ’پیر ٹوپیر‘ لینڈنگ پلیٹ فارم کی منظور ی دیدی

  

اسلام آباد  (آئی این پی) سکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے ملک میں فن ٹیک کے فروغ کی حوصلہ افزائی  کرتے ہوئے ملک کے پہلے ’پیر ٹو پیر‘  لینڈنگ پلیٹ فارم کی منظوری دے دی ہے۔ کمیشن کی منظوری  کے مطابق،  کمپنی   مجوزہ مالیاتی  پراڈکٹ  کو ایس ای سی پی کے ریگولیٹری سینڈ بکس  میں عائد کردہ شرائد و ضوابط کے  تحت، مارکیٹ میں  تجرباتی بنیادوں پر متعارف کروائے گی۔ ’پیر ٹو پیر لینڈنگ‘(Peer-to-Peer)  یعنی افرد  کی جانب سے کسی کاروبار کو  قرض کی فراہمی ایک جدید ڈیجیٹل پلیٹ فارم  ہے جہاں قرض   اور سرمایہ حاصل کرنے والے کاروبار ی ادساروں اور انفرادی  سرمایہ کار وں اور قرض دہندگان  کا ایک دوسرے سے رابطہ ہوتا ہے اس طرح سے اس ڈیجیٹل پلیٹ فارم سے کاروبار  کے لئے قرض کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے   شرائط و ضوابط کے تحت سرمایہ اکٹھا کیا جا سکتا ہے۔   س پلیٹ فارم سے سرمایہ کار قلیل مدتی قرض  دیتے ہیں جبکہ کاروباری افراد  سہل طریقے سے  سرمائے کی ضرورت کو پورا کر سکتے ہیں۔  اس  طریقے سے ملک میں سمال اینڈ میڈیم  انٹر پرائزیز (ایس ایم ایز) کو  فروغ دیا جا سکتا ہے  جبکہ روزگار اور کاروبار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔ریگولیٹری سینڈ بکس میں ٹیسٹنگ/ تجربہ کے مرحلے کے دوران،پیر ٹو پیر لینڈنگ کا  یہ پلیٹ فارم متعین شدہ پیرامیٹرز کے اندر کام کرے گا اور شرائط و ضوابط سے مشروط ہو گا۔  اس پلیٹ فارم پر ہر  قرض دہندہ / ادھار لینے والے کے  لئے  اہلیت کے مخصوص معیارات کا اطلاق ہوگا۔ یہ شرائط و ضوابط   اس مالیاتی پراڈکٹ کے لئے باقاعدہ فریم ورک کی عدم موجودگی میں  کسی بھی  مالیاتی رسک کم کرنے میں معاون ہوں گی۔ ایس ای سی پی  کے ریگولیٹری سینڈ بکس  میں نئی نئی جدید مالیاتی پراڈکٹ کو ایڈجسٹ کرنے کا فریم ورک  موجود ہے اور نئی ٹیکنالوجیز   اس سیفائدہ اٹھا سکتی ہیں۔ سینڈ بکس میں فن ٹیک کمپنیاں  محدود، بہتر وضاحت شدہ دائرہ کار میں رہتے  جدید ٹیکنالوجی کو اپنانے ہوئے   اپنی  پراڈکٹ کی جانچ کر سکتی ہیں۔

ایس ای سی پی  

مزید :

صفحہ آخر -