جہانیاں: ڈاکٹرز‘ عملے کی غفلت سے 10 ماہ کی بچی جاں بحق 

جہانیاں: ڈاکٹرز‘ عملے کی غفلت سے 10 ماہ کی بچی جاں بحق 

  

اڈاپل14 (نمائندہ پاکستان) تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہانیاں میں ڈاکٹرز وعملہ کی مبینہ غفلت سے ایک اور بچی کی جان چلی گئی‘ معمولی بخار میں مبتلا 10 ماہ کی فبیحہ کو ہسپتال منتقل کیا گیا تو ڈاکٹرز نے توجہ نہ دی, لواحقین نے ہسپتال انتظامیہ کے خلاف احتجاج کیا‘ چند روز قبل (بقیہ نمبر31صفحہ 6پر)

بھی محنت کش ڈاکٹرز کی مبینہ غلفت سے جاں بحق ہوا آج تک کاروائی نہ ہوسکی، تفصیل کے مطابق تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہانیاں میں انتظامیہ اور ڈاکٹرز کی مبینہ عدم دلچسپی غفلت ایک اور بچی کو ابدی نیند سلا گئی، چک نمبر 166 ڈبلیو بی کی رہائشی 10 ماہ کی معصوم بچی فبیحہ کو معمولی بخار میں مبتلا ہونے پر تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال جہانیاں منتقل کیا گیا لیکن میڈیکل سٹاف اور وارڈ سٹاف نے مکمل توجہ نہ دی، بخار کی شدت مسلسل زیادہ ہونے پر لواحقین نے بار بار عملہ کی توجہ مبذول کروائی لیکن سٹاف نے مبینہ غفلت کا مظاہرہ کیا اور 10 ماہ کی فبیحہ نے بخار کی شدت زیادہ ہونے کی وجہ سے دم توڑ دیا، شہریوں کا کہنا ہے کہ ہسپتال کے انتظامی امور میں غفلت کی وجہ سے اس سے قبل بھی متعدد ہلاکتیں ہوچکی ہیں, لواحقین نے ہسپتال انتظامیہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے، قبل ازیں بھی ڈاکٹرز کی مبینہ غلفت کے باعث چک نمبر 113 دس آر کا رہائشی قمر الدین جاں بحق ہوگیا تھا جس کے باوجود ذمہ داران کے خلاف آج تک کاروائی عمل میں نہ لائی جاسکی ہے۔

بچی جاں بحق

مزید :

ملتان صفحہ آخر -