پارا چنار،شادی کا گھر ماتم کدہ بن گیا،چھت گرنے سے 8خواتین جاں بحق، 37زخمی

پارا چنار،شادی کا گھر ماتم کدہ بن گیا،چھت گرنے سے 8خواتین جاں بحق، 37زخمی

  

 پاراچنار(نمائندہ پاکستان)سرحدی علاقے پیواڑ غنڈیخیل میں شادی کا گھر ماتم کدے میں تبدیل، شادی کے تقریب کے دوران دو منزلہ  کچے مکان کی چھت گرنے سے کم عمر بچیوں سمیت آٹھ خواتین جاں بحق ہوگئی ہیں دو دلہنوں سمیت سینتیس سے زائد زخمی ہوگئی ہیں علاقے کی فضا سوگوار پولیس اور ہسپتال ذرائع کے مطابق سرحدی علاقے پیواڑ غنڈیخیل میں صوبیدار میر غلام کے گھر شادی کی تقریب کے دوران گھر کی چھت اچانک زمین بوس ہوگئی جس کے نتیجے میں شادی میں شریک خواتین بچے اور بچیاں ملبے تلے دب گئے حادثے کے بعد مقامی لوگوں نے اپنی مدد آپ کے تحت امدادی کاروائیاں شروع کی اور زخمیوں کو ملبے سے نکالنا شروع کیا اس دوران ریسکیو 1122 سمیت دیگر امدادی ٹیمیں بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور زخمیوں کو ہسپتال پہنچا دیا گیا ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال پاراچنار کے ڈی ایم ایس ڈاکٹر قیصر عباس کے مطابق حادثے میں کم عمر بچوں اور بچیوں سمیت آٹھ افراد جاں بحق ہوگئی ہیں جبکہ دو دلہنوں سمیت سینتیس سے زائد خواتین بچے اور بچیاں زخمی ہوگئی ہیں اہلیان علاقہ کے مطابق ریٹائرڈ صوبیدار میر غلام ایک غریب شخص ہے اور ایف سے ریٹائرمنٹ کے بعد محنت مزدوری کرکے بچوں انتہائی مشکل حالات میں بیٹے  کی شادی کروائی اور ایک کچے کرائے کے مکان میں رہائش پذیر تھے انہوں نے حکومت سے ریٹائرڈ صوبیدار میر غلام اور جاں بحق اور زخمی ہونے والوں  کیساتھ بھر پور مالی معاونت کا مطالبہ کیا ہے ڈپٹی کمشنر ضلع کرم ڈاکٹر آفاق وزیر نے میڈیا کو بتایا کہ پیواڑ میں ہونے والے افسوس ناک واقعے کے بعد ضلعی انتظامیہ کے افسران اور ریسکیو 1122 کی ٹیمیں متاثرہ علاقے میں پہنچ گئی ہیں اور امدادی کاروائیاں کرکے زخمیوں کو ملبے سے نکال دیا اور ہسپتال پہنچا دیا ڈپٹی کمشنر کا کہنا تھا کہ ایف ڈی ایم اے کو متاثرہ خاندانوں کی ہر ممکن امداد کرنے کا کہا گیا ہے اور زخمیوں کی بہتر طریقے سے علاج معالجہ کیلئے ہسپتال انتظامیہ کو ہدایات جاری کی گئی ہیں جبکہ متاثرین کی مالی معاونت بھی کی جائے گی ڈپٹی کمشنر نے مقامی لوگوں سے بھی زخمیوں کیلئے خون کی امداد کی اپیل کی ہے

مزید :

صفحہ اول -