حضرت خواجہ غلام فریدؒ کا عرس‘ تمام تقریبات منسوخ‘ زائرین کا داخلہ بند

  حضرت خواجہ غلام فریدؒ کا عرس‘ تمام تقریبات منسوخ‘ زائرین کا داخلہ بند

  

راجن پور(تحصیل رپورٹر) ہوم ڈیپارٹمنٹ کی طرف سے عرس حضرت خواجہ غلام فرید کی تقریبات پر پابندی عائد ہونے سے دربارفرید پر عظمت فرید،خواجہ فرید تصوف،سرائیکی،خواجہ فرید عشق رسول کانفرنس سمیت دیگر تمام مذہبی تقریبات منسوخ ہو گئیں ہیں سرائیکی کلچرل سٹال بھی نہیں لگایا جائے گا البتہ  سماع، نعت قوالی اور قرآن خوانی کی محافل کیلئے پندرہ پندرہ منٹ کا وقت مخصوص کیا گیا ہے جس میں صرف 25 سے زیادہ افراد شریک نہ ہونگے۔عرس کی افتتاحی تقریب جس میں عرق گلاب سے مزار فرید کوغسل دیا جائے گامیں بھی پچاس افراد شرکت کریں محدود پیمانے پر ہونے والی ان تقریبات میں شرکت کیلئے خاندان فرید خصوصی پاس جاری کرے گادربار فرید اور گردونواح کا تمام علاقہ عرس کے تین روز سیل رہے گا زائرین کو جانے کی اجازت نہیں ہو گی بین الاقوامی قوال مہر علی اور شیر علی بھی پرفارم نہیں کر سکیں گے مقامی قوالوں کو پرفارم کرنے کی اجازت دی گئی ہے عرس کے تینوں روز دربار فرید زائرین کے لیے بند رہے گا ضلعی انتظامیہ نے خانوادہ فرید کے تمام افراد کو پابندیوں بارے آگاہ کر دیا۔اسسٹنٹ کمشنر راجن پور نے ولی عہد خواجہ راول معین کوریجہ اور خواجہ عزیر عامر کوریجہ کو ایک میٹنگ میں ان اقدامات بارے آگاہ کیا۔ ادھر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر راجن پور فیصل گلزار نے ڈپٹی کمشنر راجن پور کے ہمراہ کوٹ مٹھن دربار حضرت خواجہ غلام فرید کا دورہ کیا‘ دورہ میں دربار کے منتظمین سے ملاقات کی سیکیورٹی صورتحال اور عرس کے دوران انتظامات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔ اس کے بعد ڈی پی او راجن پور نے دربار کے اطراف انٹری اور ایگڑیٹ پوائنٹس پر سیکیورٹی کے انتظامات کا جائزہ لیا۔ سی سی ٹی وی کیمرہ اور کنٹرول روم کا وزٹ کیا۔  اس موقع پر ڈی پی او راجن پور فیصل گلزار کا کہنا تھا کہ دوران عرس سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کو یقینی بنایا جائے گا۔راجن پور پولیس اپنے تمام تر وسائل کو بروئے کار لاتے ہوئے سیکیورٹی کے تمام انتظامات پورے کرے گی۔ عرس اور دربار کی سیکیورٹی کو تھری لیئر سیکیورٹی میں تقسیم کیا جائے گا۔

داخلہ بند

مزید :

صفحہ اول -