پانچ ماہ گزرگئے ،انٹر میڈیٹ کا امتحانی عملہ معاوضہ سے محروم

پانچ ماہ گزرگئے ،انٹر میڈیٹ کا امتحانی عملہ معاوضہ سے محروم

  



لاہور(ذکاء اللہ ملک)انٹر میڈیٹ کا امتحانی عملہ اورامیدواروں کی جوابی کا پیوں کی چیکنگ کرنیوالے ممتحن حضرات کو5ماہ گزرنے کے باوجود معاوضہ سے محروم،جبکہ بورڈ انتظامیہ کی طر ف سے مارکنگ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے اساتذہ کو بھی کوئی وظیفہ نہ مل سکا تفصیلات کے مطابق بورڈآف انٹر میڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن لاہورکے زیراہتمام گیارہویں اور بارہویں کے سالانہ امتحانات رواں سال مئی اور جون میں ہوئے تھے،جن میں تقریبا 1لاکھ25ہزار امیدواروں نے شرکت کی،لاہور،قصور،ننکانہ صاحب اور شیخوپورہ سمیت کل 774امتحانی مراکز قائم کئے گئے تھے۔مذکورہ امتحانات کے انعقاد کیلئے سپرنٹنڈنٹ/ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ / نگران/کلرک جبکہ پیپرز کی مارکنگ کیلئے ہیڈ ایگزامینرز/ سب ایگزامینرز سمیت کل7ہزار افراد پر مشتمل عملہ نے ڈیوٹی سرانجام دی تھی،لیکن لاہور تعلیمی بورڈ کی طرف سے انکو تاحال نہ تو کوئی معاوضہ ادا کیا گیا اور نہ ہی بہترین کارکردگی کامظاہرہ کرنیوالے اساتذہ کو انعام یا وظیفہ دیا گیاہے کیونکہ چیئرمین لاہور تعلیمی بورڈمحمد نصر اللہ ورک نے امیدواروں کی جوابی کاپیوں کی مارکنگ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے اساتذہ کیلئے انعام و وظیفہ کا اعلان کیا تھا۔اس سلسلے میں رابطہ کرنے پرکنٹرولر لاہور بورڈآف انٹر میڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن لاہورانور فاروق نے بتایا کہ انٹرمیڈیٹ پارٹ ون اور پارٹ ۱۱کے امتحانات میں ڈیوٹی سرانجام دینے اورامیدواروں کی جوابی کاپیاں مارکنگ کرنیو الے ملازمین کے بنک اکاؤنٹ کی تصدیق کے مرحلے کے باعث تاخیر ہوئی ہے ،اگلے ہفتے تک تمام ادائیگیاں کر دی جائیں گی انہوں نے بتایا کہ جن اساتذہ نے پیپرز مارکنگ میں20یا اس سے زائد غلطیاں کی ہیں انکو آئندہ امتحانات کیلئے نااہل قرار دیدیا جائیگاجبکہ مارکنگ میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنیوالے اساتذہ کو انعام/وظیفہ بھی جلد دیدیا جائیگا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...