این اے 125انتخابی دھاندلی کیس میں انکوائری کمیشن کے بیان پر جرح مکمل

این اے 125انتخابی دھاندلی کیس میں انکوائری کمیشن کے بیان پر جرح مکمل

  



لاہور(نامہ نگار)الیکشن ٹربیونل کے جج جسٹس (ر) کاظم ملک نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 125انتخابی دھاندلی کیس میں انکوائری کمیشن کے بیان پر جرح مکمل کر لی۔الیکشن ٹربیونل نے کیس کی سماعت29اکتوبر تک ملتوی کرتے ہوئے فریقین کے وکلاءکو حتمی بحث کے لئے طلب کرلیا ہے۔عدالت میں گزشتہ روزوفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ انکوائری کمیشن کی رپورٹ حقائق کے برعکس تیار کی گئی ہے جس کی وجہ ہے وہ رپورٹ کے بہت سے مندرجات سے قطعی طور پر متفق نہیں ہیں۔این اے 125سے ناکام امیدوار حامد خان کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ عام انتخابات کے دوران اسی حلقہ میں کھلے عام دھاندلی کی گئی جس کی بناءپروہ اس حلقے کے انتخابی نتائج کو تسلیم نہیں کرتے۔فاضل جج نے انکوائری کمیشن کے بیان پر جرح مکمل کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر فریقین کے وکلاءکو حتمی بحث کے لئے طلب کر تے ہوئے سماعت ملتوی کردی ہے۔

 جرح مکمل

مزید : صفحہ آخر