خیبر ایجنسی، آپریشن میں مزید 8 دہشت گرد ہلاک ، متعدد زخمی،3 ٹھکانے تباہ

خیبر ایجنسی، آپریشن میں مزید 8 دہشت گرد ہلاک ، متعدد زخمی،3 ٹھکانے تباہ

  



                                    باڑہ(اے این این) خیبر ایجنسی میں جاری آپریشن میں خیبر ون کے دوران مزید8دہشت گردہلاک ،متعدد زخمی،3ٹھکانے تباہ ،کرفیو کی خلاف ورزی پر فورسز کی فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ،ایک زخمی ہو گیا جبکہ کالعدم تنظیم کے اہم کمانڈر سمیت 100شدت پسندوں نے ہتھیار ڈال دیئے،سپاہ میںنامعلوم افراد کی فائرنگ سے منگل باغ کا بیٹا اسرافیل ساتھی کمانڈر سمیت ہلاک۔تفصیلات کے مطابق خیبر ایجنسی میں پاک فوج کا ” خیبر ون“ آپریشن تندہی سے جاری ہے اوراس دوران کی جانے والی ایک تازہ کارروائی میں ملک دین خیل، اکا خیل اور سپاہ میں سیکورٹی فورسز نے دہشتگردوں کے تین ٹھکانوںکو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں 6دہشتگرد ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے۔آپریشن کو موثر بنانے کے لئے تحصیل باڑہ میں گزشتہ تین دنوں سے کر فیوں نافذ ہے ہفتے کے صبح خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ کے مختلف علاقوں اکاخیل ،ملک دین خیل ،سپاہ اور بر قمبر خیل میں سیکورٹی فورسز نے شدت پسندوں کے خلاف بڑے پیمانے پر کاروائی کی ،سیکورٹی فورسز زرائع کے مطابق اپریشن کے دوران کالعدم تنظیم لشکر اسلام کے چھہلاک اور ان کے تین ٹھکانے تباہ کئے گئے اپریشن کے دوران بھاری ہتھیاروں کا استعمال کیا گیا ،تحصیل باڑہ سے لشکر اسلام کے ایک کمانڈر میلم سمیت سو شدت پسندوں نے ہتھیار ڈال دئیے ہیں اور خود کو سکیورٹی فورسز کے حوالے کر دیا ہے۔جن کو بعد ازاں تحصیل باڑہ کے علاقہ اکاخیل میں موجود میلوٹ کیمپ کو منتقل کر دیاگیا،خیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ میںگزشتہ تین دنوں سے کرفیوں نافذ ہے جس کی وجہ سے یہاں کے مکینوںکے مشکلات میں اضافہ کیا ہے ، گزشتہ رات کرفیوں کی خلاف ورزی پر دو بھائیوںحیدراور یونس پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں ایک ہلاک جبکہ دوسرا زخمی ہو گیا،کرفیو اور اپریشن کی وجہ سے دوسو خاندانوں نے لالا کنڈاﺅ علی مسجد کے راستے نقل مکانی کر کے محفوظ علاقوں کو منتقل ہو گئے ۔آپریشن خیبر ون کے تین دنوں کی کارروائی میں اب تک سینتیس شدت پسند ہلاک اور بیس سے زائد زحمی اور تین ٹھکانے بھی تباہ ہوئے۔ ۔دریں اثناءخیبر ایجنسی کی تحصیل باڑہ کے علاقے سپین قبر میں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے کالعدم تنظیم لشکر اسلام کے امیر منگل باغ کا بیٹامحافظ سمیت ہلاک ہوگیا ۔مارے جانے والے محافظ ھنیف خان کا شمار بھی کالعدم لشکر اسلام کے اہم کمانڈرز میں ہوتا تھا۔تحصیل باڑہ میں کرفیو کے باعث اسرافیل کی ہلاکت کے حوالے سے مزید تفصیل سامنے نہیں آ سکی۔کالعدم لشکر اسلام کی جانب سے بھی ہلاکت کی تصدیق یا تردید نہیں آئی۔

8دہشت گردہلاک

مزید : صفحہ آخر


loading...