مردہ خاتون کی قبر سے تین سال بعد موبائل میسج موصول۔۔۔؟

مردہ خاتون کی قبر سے تین سال بعد موبائل میسج موصول۔۔۔؟
مردہ خاتون کی قبر سے تین سال بعد موبائل میسج موصول۔۔۔؟

  



لندن (مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ کے شہر ساو¾تھ شیلڈز میں رہنے والی ایک خاتون کواپنی دادی کی وفات کے تین سال بعد قبرسے ایک موبائل میسج موصول ہوگیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق لیزلی ایمرسن کا 2011ءمیں انتقال ہوا تھا تو ان کے ساتھ موبائل فون سمیت ان کی چند پسندیدہ اشیاءبھی دفن کر دی گئیںجس پر ا±ن کی پوتی شیری ایمرسن ٹیکسٹ میسج کرتی رہیں اور موقف اپنایاکہ میسج بھیجنے سے سکون ملتا تھا۔ایمرسن کاکہناتھاکہ دادی کی موت کے بعد وہ ساو¿تھ شیلڈز کی ہارٹن سیمیٹری میں جانے کے بجائے اپنی دادی کو موبائل فون کے ذریعے چھوٹے چھوٹے نجی پیغامات بھیجنے لگیں تاکہ وہ ان کے قریب رہ سکیں حالانکہ ا±نہیں یہ بھی معلوم تھاکہ وہ زندہ نہیں لیکن پھر بھی میسج نہیں پہنچ رہے تھے۔ایک دن مردہ دادی کے موبائل فون سے یہ پیغام کہ ’میں تمہیں دیکھ رہی ہوں، سب اچھاہوجائے گا، بس یہ وقت گزارلو‘ وہ ششدر رہ گئیں،اور ان کے دماغ میں کئی خوفناک چیزیں دوڑ رہی تھیں تاہم بعد میں پتہ چلا کہ موبائل نیٹ ورک نے ان کا نمبر کسی اور الاٹ کر دیا تھا اور وہ سمجھا کہ اس کے دوست اس سے مذاق کر رہے ہیں۔جب ایمرسن کے خاندان میں سے کسی نے وہ نمبر ملایا تو جس شخص نے وہ فون اٹھایا اس نے انھیں بتایا کہ یہ نمبر اسے آلاٹ ہوا ہے اور کیونکہ اسے ایسا لگا کہ اس کے دوست اس قسم کے ٹیکسٹ میسج بھیج کر اس سے مذاق کر رہے ہیں اس نے پیغام بھیج دیا۔نیٹ ورک او2 نے خاندان سے بات کی ہے اور کسی قسم کی پریشانی یا تکلیف پہنچنے پر معافی مانگی ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...