جیل میں ہلاک ہونیوالے توہین رسالت کے قیدی کی لاش ورثاء کے حوالے

جیل میں ہلاک ہونیوالے توہین رسالت کے قیدی کی لاش ورثاء کے حوالے

  




لاہور( کرائم سیل) کیمپ جیل میں پرسرار طور پر ہلاک ہونے والا توہین رسالت کے ملزم کی نعش شادمان پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کردی جبکہ ورثا نے الزام عائد کیا ہے کہ سلیم کو جیل میں قیدیوں نے تشدد کا نشانہ بنایا ،جس کے باعث اسکی موت ہوئی ابتدائی پوسٹ مارٹم کے مطابق سلیم کا بلڈ پریشرکم ہونے پر اسکی موت واقع ہوئی ہے۔ متوفی عرصہ سے بلیڈ پریشرکے مرض میں مبتلا تھا ، جیل کے عملے نے بتایا کہ حوالاتی سلیم جھنگ کا رہائشی تھا اور بیمار تھا،کچھ عرصہ قبل اسے جھنگ سے لاہور کیمپ جیل منتقل کیا گیا تھا اس پر تشدد کرنے کا الزام بے بنیاد ہے سلیم کو دیگر قیدیوں کے علاوہ بند کیا گیا تھا رات گئے اچانک اسکی حالت غیر ہوئی اسے ہسپتال پہنچایا گیا جہاں وہ جانبر نہ ہوسکا اصل حقائق سامنے آنے پر ہی اسکی لاش پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانہ جمع کروائی تھی جو رپورٹ میں ظاہر ہوگیا کہ اس کی موت بلیڈ پریشر کے باعث ہوئی، لواحقین متوفی کی لاش آبائی گاؤں جھنگ لے گئے ہیں۔

مزید : علاقائی