روس یوکرائن کو عارضی طور پر گیس فراہم کرنے پرتیار ہوگیا

روس یوکرائن کو عارضی طور پر گیس فراہم کرنے پرتیار ہوگیا
روس یوکرائن کو عارضی طور پر گیس فراہم کرنے پرتیار ہوگیا

  



 ماسکو (ویب ڈیسک) میلان میں ہونےوالے اعلیٰ سطحی مذاکرات میں یوکرین کے ساتھ معاملات میں کوئی ٹھوس پیشرفت نہ ہونے کے با وجود روس نے یوکرائن کے لئے قدرتی گیس کی فراہمی عارضی طور پر بحال کرنے پر اتفاق کیا ہے۔ روس کے صدر ولادمیرپیوٹن نے کہا کہ میلان میں ہونے والے اجلاس میں کم از کم موسم سرما کے لئے یوکرین میں گیس کی فراہمی کے لئے معاہدہ ہوا ہے۔ ماسکو نے رواں سال جون میں یہ کہہ کر قدرتی گیس کی فراہمی بند کردی تھی کہ یوکرائن کے ذمے لگ بھگ پانچ ارب ڈالر کی رقم واجب الادا ہے۔ صدر پیوٹن نے اپنے یوکرائنی ہم منصب پیٹرو پوروشنکو سے ملاقات کے بعد یورپی ملکوں پر زور دیا کہ وہ اس رقم کی ادائیگی کے لئے کیف حکومت کی مدد کریں۔ پیوٹن نے مغرب کے ان الزامات کو ایک بار پھر رد کیا کہ کریملن یہاں چھ ماہ سے جاری لڑائی میں باغیوں کو فوجی اور اسلحہ فراہم کرکے مزید بڑھارہا ہے۔ اٹلی، فرانس، جرمنی، روس اور یوکرین کے رہنماﺅں نے اتفاق کیا کہ اس حد بندی کی نگرانی بغیر ہوا باز جہازوں سے کی جائے گی۔

مزید : بین الاقوامی


loading...