جہاز کے عملے نے مسافر خاتون کو دوران پرواز ٹائلٹ میں بند کردیا

جہاز کے عملے نے مسافر خاتون کو دوران پرواز ٹائلٹ میں بند کردیا
جہاز کے عملے نے مسافر خاتون کو دوران پرواز ٹائلٹ میں بند کردیا

  



نیویارک (نیوز ڈیسک) خطرناک ترین ایبولا وائرس نے اس وقت دنیا بھر کے ممالک کو شدید خوف و ہراس میں مبتلا کررکھا ہے۔ اس کی تازہ مثال حال ہی میں ٹیکس سٹی سے شکاگو جانے والی امریکن ائیرلائنز کی پرواز کے دوران پیش آنے والا واقعہ ہے۔ دوران پرواز درمیانی عمر کی افریقی خاتون کو طبیعت کی خرابی کے باعث الٹی آئی تو عملے نے اسے جہاز کے ٹائلٹ میں بند کردیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق عملے نے اسے خاتون سے ان تمام جگہوں کی تفصیلات مانگیں جہاں وہ حال میں جگہوں کی تفصیلات مانگیں جہاں وہ حال میں جاچکی ہے اور پھر اسے ٹائلٹ میں بند کردیا گیا۔ خاتون نے پرواز کے بغیر 45 منٹ بیت الخلاءمیں ہی گزارے۔ دوسری جانب اس کا ”کیری آن“ سامان پلاسٹک کور میں لپیٹ کر علیحدہ کردیا گیا، یاد رہے کہ ایبولا وائرس نہایت آسانی اور تیزی کے ساتھ متاثرہ شخص سے اردگرد موجود افراد کے جسم میں داخل ہوسکتا ہے اور مریض کا لگاتار الٹیاں کرنا اور بخار میں مبتلا ہونا اس کی بنیادی علامات میں سے ہیں۔ اس وقت بیشتر افریقی ممالک اس خطرناک وائرس کی لپیٹ میں ہیں۔ تاہم حالیہ واقعہ پر چند تجزیہ کاروں اور مسافروں کی جانب سے ائیرلائنز کی جانب سے نسلی تعصب کے مظاہرے کے الزامات بھی لگائے گئے ہیں، ان کا کہنا ہے کہ عملے نے خاتون کے افریقی ہونے کے باعث ایسا برتاﺅ کیا، اگر اس کی جگہ کو ”گورا“ مسافر ہوتا تو یہ نہ کیا جاتا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...