عزاداری میں رکاوٹیں قابل مذمت‘ جھوٹے مقدمات فوری واپس لیے جائیں سبطین حیدر

عزاداری میں رکاوٹیں قابل مذمت‘ جھوٹے مقدمات فوری واپس لیے جائیں سبطین حیدر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان (سٹی رپورٹر) شیعہ علماکونسل پنجاب کے صدر علامہ سید سبطین حیدر سبزواری نے پہلے عشرہ محرم میں عسکری اداروں ، پولیس اور حکومت کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ دہشت گردی کا کوئی بڑا واقعہ نہ ہونا اداروں کی کامیابی ہے، لیکن ضلعی انتظامیہ نے اپنی روایتی نااہلی اور پولیس میں موجود چند شرپسند متعصب عناصر کی وجہ سے مجالس اور جلوس ہائے عزا میں رکاوٹیں کھڑی کی گئیں اور جھوٹے (بقیہ نمبر35صفحہ12پر )
مقدمات درج کئے گئے، جن کی شدید مذمت کرتے ہیں اور مطالبہ کرتے ہیں کہ حکومت انہیں واپس لے۔عزاداری سید الشہدا کو کوئی نہیں روک سکتا ، یہ ہمارا آئینی اور شہری حق ہے۔ ہم رجسٹرڈ نان ر جسٹرڈ کی بحث کو مسترد کرتے ہوئے واضح کرتے ہیں کہ مجالس کاسرکاری ریکارڈ رکھنا، متعلقہ اداروں کاکام ہے، بانیان مجالس کا نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے عزاداری کونسل کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں پہلے عشرے میں مجالس عزا کے انعقادا ور محرم کمیٹی کی کارکردگی کا جائز ہ لیا گیا۔ اس حوالے سے صوبائی کابینہ کا اجلاس طلب کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیاعلامہ سبطین سبزواری نے کہا کہ آبادی بڑھنے کے ساتھ نئی مساجد، امام بارگاہوں کے قیام اورماتمی جلوسوں کے روٹس ہمارا حق ہے، لیکن افسوس کہ نئی مجالس کو بھی روکنے کی سازشیں کی گئیں انہوں نے کہا کہ کوٹلی لوہاراں سیالکوٹ،مظفر گڑھ،سرگودھا، راولپنڈی، منڈی بہاوالدین، ہارون آباد، رحیمیار خان، گکھڑ منڈی اور دیگر علاقوں میں مجالس میں رکاوٹیں پیدا کی گئیں۔مگر عزاداروں نے استقامت کا مظاہرہ کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ عزاداری کسی مسلک و مکتب کے خلاف نہیں، یزیدیت کو بے نقاب کرنے کی زینبی تحریک ہے، اسے جاری رکھا جائے گا۔ یہ اسی مقدس تحریک کا اثر ہے کہ آج یزیدیت گالی بن چکی ہے۔