سی ٹی ڈی کی تین اضلاع میں کارروائی، 15دہشتگرد ہلاک، متعدد سہولت کار گرفتار

سی ٹی ڈی کی تین اضلاع میں کارروائی، 15دہشتگرد ہلاک، متعدد سہولت کار گرفتار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(کرائم رپورٹر)سی ٹی ڈی پولیس نے ڈیرہ غازی خان ،شیخو پورہ اور گوجرانوالہ میں دہشتگردوں کے ساتھ ہونے والے مقابلوں میں 15خطرناک دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا ہے جبکہ ان کے متعددسہولت کاروں کو بھی حراست میں لیا گیا ہے ۔ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کے بارے میں معلوم ہوا ہے کہ وہ انتہائی خطرناک اہم شخصیات کے اغوا اور ٹارگٹ کلنگ کی وارداتوں میں ملوث تھے جبکہ متعدد افراد کو انہوں نے اغوا کر کے تاوان بھی حاصل کر رکھا تھا ۔ہلاک ہونے والے دہشتگردوں کا تعلق ایک کالعدم تنظیم سے تھا ۔سی ٹی ڈی پولیس کے مطابق ان دہشتگردوں کی گرفتاری پر پنجاب حکومت نے بھاری انعام کا اعلان بھی کر رکھا تھاجبکہ یہ گزشتہ کئی سالوں سے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مطلوب تھے۔ سی ٹی ڈی پولیس کے مطابق یہ ملزمان شہریوں کو اغوا کرنے کے بعد افغانستان لیجا کر اہلخانہ سے تاوان طلب کرتے تھے جبکہ انہوں نے مختلف شہروں میں کرائے پر گھر حاصل کر رکھے تھے جہاں وہ وارداتیں کرنے کے بعد روپوش ہو جاتے تھے جبکہ ان کے خاندان نے ان سے لاتعلقی کا اعلان کر رکھا تھا ۔سی ٹی ڈی پولیس کے مطابق یہ تمام دہشتگرد انتہائی مطلوب افراد میں شامل تھے ان میں سے ایک دہشتگرد وہ بھی ہے جس نے سابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل پرویز مشرف کے سکواٖڈ پر حملہ کی منصوبہ بندی کی تھی ۔جبکہ تین دہشتگردوں نے سابق گورنر سلیمان تاثیر کے بیٹے کو بھی گلبرگ کے علاقہ سے 6سال قبل اغوا کیا تھا ۔یہ دہشتگرد شیخوپورہ میں مقابلہ کے دوران مارے گئے ہیں ۔جبکہ ڈیرہ غازی خان میں ہلاک ہونے والے دہشتگردوں نے سابق ایک اعلیٰ فوجی افسر کے داماد کو گارڈن ٹاؤن کے علاقہ سے اغوا کرنے کے علاوہ غیر ملکیوں کو بھی قتل کیا تھا ۔ذرائع کے مطابق قانون نافذ کرنے والے اداروں نے ان کے جن سہولت کاروں کوبھی گرفتار کیا ہے ان سے تفتیش جاری ہے اور کوشش کی جا رہی ہے کہ ان کے فرار ہونے والے باقی ساتھیوں کو بھی گرفتار کیا جا سکے ۔ذرائع نے دعوی کیا ہے کہ مفرور دہشتگرد پڑوسی ملک میں چھپے ہوئے ہیں ۔

مزید :

صفحہ آخر -