ناقص منصوبہ بندی کے باعث خیبر پختونخوا مشکلات سے دوچار ہے ،شیر افغان خان

ناقص منصوبہ بندی کے باعث خیبر پختونخوا مشکلات سے دوچار ہے ،شیر افغان خان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


تخت بھائی ( نامہ نگار) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنمااور سابق ایم پی اے نوابزادہ شیر افغان خان نے کہا کہ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت بری طرح ناکام ہوچکی ہے اور پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت ناقص اور غلط منصوبہ بندی کے باعث خیبر پختو نخواہ تباہی کے دھانے پہنچ چکا ہے ۔موجودہ حکومت نے صوبے میں ایک پیسے کی ترقیاتی کام نہیں کئے اور اربوں روپے فنڈز صوبائی حکومت سے لیپس ہو چکا ہے پاکستان کے تاریخ میں پہلی بار خیبر پختونخوا کی حکومت نے75ارب روپے قرضہ لیا اور ان سے162ارب روپے لیپس ہوئے ۔آنے والا دور ایک بار پھر عوامی نیشنل پارٹی کا ہے کارکن آنے والے انتحابات کے لیے تیاریاں اب سے شروع کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے تخت بھائی میں ملگری استاذان اور بابوگان کے عہدیداروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر ملگری استاذان ضلع مردان کے صدرحفیظ الرحمان ملگری بابوگان کے صدر حاجی ارشد حسین نائب صدر محمد ادریس تنولی، تحصیل تخت بھائی کے صدر امتیاز خان ،پیر فانوس ،پیر واسف ،ڈاکٹر گل محمد اور لیاقت نے بھی خطاب کیا ۔انہوں نے کہا کہ اے این پی ہی ایک جمہوری پارٹی ہے اور پارٹی نے جس کو بھی ٹکٹ دیا تو سب سے پہلے میں ان کے لیے جلسہ کروں گا اور پارٹی ائین کا پابند رہونگا ۔اساتذہ قوم کے معماران ہیں اور ملک کی ترقی میں اہم کردار ادا کرتے ہیں ۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے صوبے کو معاشی طور پر مفلوج کر رکھ دیا ہے عمران خان نے پختون قوم کو دھوکہ دیکر ووٹ لیے اور اب تحت اسلام اباد حاصل کرنے کے لیے خیبر پختو نخوا کو تباہ و برباد کر رہا ہے۔ عوامی نیشنل پارٹی نے اپنے دورحکومت میں صوبے میں ترقیاتی کاموں کا جال بچھا دیا تھا اورضلع مردان میں ریکارڈ ترقیاتی کام کئے تھے۔ موجودہ حکومت نے اے این پی کے دور حکومت میں جو ترقیاتی کام شروع کیے تھے۔ ان کا فنڈز روک کر پختون دشمنی کا واضح ثبوت دیا ہے ۔ صوبائی حکومت کے ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے 162ارب روپے لیپس ہوئے ہیں ۔صوبے کی تاریخ میں پہلی بار صوبائی حکومت نے75ارب روپے قرضہ لیکر غریب عوام کو گروی رکھ دیا ہے۔ انہوں نے کارکنوں سے اپیل کی کہ آپس کے اختلافات کو ختم کرکے پارٹی پروگرام کو عوام تک پہنچایں ۔