ہائی کورٹ :سامعہ قتل کیس کی لاہور منتقلی کی درخواست پر ملزموں کو نوٹس

ہائی کورٹ :سامعہ قتل کیس کی لاہور منتقلی کی درخواست پر ملزموں کو نوٹس
ہائی کورٹ :سامعہ قتل کیس کی لاہور منتقلی کی درخواست پر ملزموں کو نوٹس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے برطانوی نژاد سامعہ شاہد کے قتل کا ٹرائل جہلم سے لاہور منتقل کرنے کی درخواست باقاعدہ سماعت کے لئے منظور کرتے ہوئے مقتولہ کے پہلے شوہر محمد شکیل سمیت دیگر ملزموں سے جواب طلب کر لیاہے۔

چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے مقتولہ کے دوسرے شوہر مختار کاظم کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار اور مقدمہ کے مدعی کی طرف سے ملک اویس خالد ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ سامعہ شاہد کے قتل کا مقدمہ مقتولہ کے پہلے شوہر محمد شکیل ، محمد حسین، محمد شاہد، مدیحہ شاہد اور امتیاز بی بی کے خلاف جہلم میں درج ہے جس میں متعلقہ ٹرائل کورٹ ٹرائل بھی کر رہی ہے، دوران ٹرائل مقتولہ کے دوسرے شوہر مختار کاظم کو قتل کرنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں جس کی وجہ سے مدعی مقدمہ کی ٹرائل کی قانون کے مطابق پیروی نہیں کر پا رہا۔

انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ اس کیس میں پولیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے بھی ٹرائل کو کسی دوسرے شہر منتقل کرنے کی سفارش کی ہے، اس لئے قتل کیس کا ٹرائل جہلم سے لاہور منتقل کیا جائے، عدالت نے درخواست قابل سماعت قرار دیتے ہوئے ملزموں کو 4نومبر کو جواب داخل کرانے کے لئے نوٹسز جاری کردیئے ہیں۔

مزید :

لاہور -