رنگ روڈ ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج ،حکومت سے جواب طلب

رنگ روڈ ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج ،حکومت سے جواب طلب
رنگ روڈ ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج ،حکومت سے جواب طلب

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار خصوصی )رنگ روڈ ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا، چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے اس سلسلے میں دائرشہری محمد عمیر کی درخواست پر پنجاب حکومت سے جواب طلب کر لیاہے جبکہ رنگ روڈ اتھارٹی کے ذمہ دار افسر کو بھی 21 اکتوبر کو پیش ہونے کا حکم دیا گیا ہے ۔درخواست گزار کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ پنجاب حکومت رنگ روڈ پر ایسٹرن بائی پاس بنانے جا رہی ہے، ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر عالمی ہائی ویز رولز کی خلاف ورزی ہے، ایسٹرن بائی پاس کا محمود بوٹی انٹرچینج سے فاصلہ صرف 600 فٹ ہے، عالمی ہائی ویز رولز کے مطابق دو انٹرچینجز کے درمیان کم از کم ڈیڑھ کلومیٹر فاصلہ ہونا لازمی ہے،انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ ایسٹرن بائی پاس کے لئے محمود بوٹی، لکھوڈیر سمیت چار دیہات سے اراضی ایکوائر کی جا رہی ہے، چار دیہاتوں سے ہزاروں لوگ بے گھر ہوں گے جن کی آباد کاری کے لئے حکومت نے کوئی انتظام نہیں کیا، انہوں نے استدعا کی کہ رنگ روڈ ایسٹرن بائی پاس کی تعمیر روکنے کا حکم دیا جائے اور بائی پاس کے لئے اراضی ایکوائر کرنے کے نوٹیفکیشن کالعدم کئے جائیں، عدالت نے پنجاب حکومت کو 21اکتوبر کے لئے نوٹسز جاری کر دیئے اور رنگ روڈ اتھارٹی کے ذمہ دار افسر کو بھی طلب کر لیاہے۔

مزید :

لاہور -