آئی ایم ایف معاہدے کے مطابق چلنے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،جلد بہتری آنا شروع ہو جائے گی:ڈاکٹر سلمان شاہ

آئی ایم ایف معاہدے کے مطابق چلنے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،جلد ...
 آئی ایم ایف معاہدے کے مطابق چلنے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،جلد بہتری آنا شروع ہو جائے گی:ڈاکٹر سلمان شاہ

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعلیٰ پنجاب کے معاشی مشیر اور معروف ماہر اقتصادیات ڈاکٹر سلمان شاہ نے کہا کہ آئی ایم ایف معاہدے کے مطابق چلنے سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،جلد بہتری آنا شروع ہو جائے گی،حکومت کو 30 ارب ڈالر چاہیے تھے لیکن ڈالر تھے ہی نہیں،جس کی وجہ سے پاکستان نے بیرون ملک سے قرضے بھی لیے اور 8 سے 10 ارب ڈالر کے قرضے بھی ملے جبکہ آئی ایم ایف کے پاس بھی مجبوراً جانا پڑا تاہم اب شرح سود میں کمی آنے کا امکان ہے،پاکستان اب بہتری کی جانب گامزن ہے۔

نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر سلمان شاہ کا کہنا تھا کہپاکستان کی ایکسپورٹ بہتر ہو گئی ہے اور مزید بہتری کی جانب گامزن ہے،پاکستان کو ٹیکس کے مسائل کا سامنا ہے اور ایف بی آر کو مزید بہتر کرنے کی ضرورت ہے،اگر ٹیکس کا نظام درست ہو گیا تو پاکستانی معیشت میں کافی بہتری آنے کا امکان ہے۔انہوں  نے کہا کہ ہمیں معیشت میں بہتری لانے کے لیے ریفارمز کرنے کی ضرورت ہے جس پر کام کیا جا رہا ہے، شرح سود اتنا زیادہ نہیں ہے جس پر شور مچایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا مسئلہ ہے کہ آپ کو بجلی ہی بہت مہنگی پڑ رہی ہے جس کی وجہ سے مہنگائی بڑھ رہی ہے،ہم آئی ایم ایف کے معاہدے کے مطابق چل رہے ہیں جس کی وجہ سے ہمیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے تاہم جلد بہتری آنا شروع ہو جائے گی۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور