کاش میں تیرے حسیں ہاتھ کا کنگن ہوتا| وصی شاہ |

کاش میں تیرے حسیں ہاتھ کا کنگن ہوتا| وصی شاہ |
کاش میں تیرے حسیں ہاتھ کا کنگن ہوتا| وصی شاہ |

  

کنگن

کاش میں تیرے حسیں ہاتھ کا کنگن ہوتا

تو بڑے پیار سے بڑے چاؤ سے بڑے مان کے ساتھ

اپنی نازک سی کلائی میں چڑھاتی مجھ کو

اور بےتابی سے فرقت کے خزاں لمحوں میں

تو کسی سوچ میں ڈوبی جو گھماتی مجھ کو

میں تیرے ہاتھ کی خوشبو سے مہک سا جاتا

جب کبھی موڈ میں آ     کر مجھے چوما کرتی

تیرے ہونٹوں کی حدت سے دہک سا جاتا

رات کو جب بھی تو نیندوں کے سفر پر جاتی

مرمریں ہاتھ کا اک تکیہ بنایا کرتی

میں ترے کان سے لگ کر کئی باتیں کرتا

تیری زلفوں کو ترے گال کو چوما کرتا

جب بھی تو بند قبا کھولنے لگتی جاناں

اپنی آنکھوں کو ترے حسن سے خیرہ کرتا

مجھ کو بےتاب سا رکھتا تیری چاہت کا نشہ

میں تری روح کے گلشن میں مہکتا رہتا

میں ترے جسم کے آنگن میں کھنکتا رہتا

کچھ نہیں تو یہی بے نام سا بندھن ہوتا

کاش میں تیرے حسیں ہاتھ کا کنگن ہوتا

شاعر: وصی شاہ 

 ( شعری مجموعہ:آنکھیں بھیگ جاتی ہیں؛سال اشاعت،1997)

Kangan

Kaash   Main   Teray   Haseen   Haath   Ka   Kangan   Hota

Tu   Barray   Payaar   Say   Barray   Chaao   Say   Barray   Maan   K   Saath

 Apni   Naazuk   Si   Kalaai   Men   Charrhaati   Mujh   Ko

Aor   Be   Taabi   Say   Furqat   K   Khizaan   Lamhon   Men

 Tu   Kisi   Soch   Men   Doobi   Jo   Ghumaati   Mujh   Ko

Main   Tiray   Haath   Ki    Khushbu   Say   Mahak   Sa   Jaata

 Jab   Kabhi   Mood   Men   Aa   Kar   Mujhay   Chooma   Karti

Teray   Honton    Ki   Hiddat   Say   Dahak   Sa   Jaata

Raat   Ko   Jab   Bhi   Tu   Neendon   K   Safar   Par   Jaati

Marmareen   Haath   Ka   Ik   Takiya   Banaaya   Karti

Main   Tiray   Kaan   Say   Lagg   Kar   Kai   Baaten    Karta

Teri   Zulfon   Ko   Tiray   Gaal   Ko    Chooma   Karta

Jab   Bhi   Tu   Band-e-   Kabaa   Kholnay    Lagti   Jaana

Apni   Aankhon   Ko   Tiray   Husn   Say    Kheera   Karta

 Mujh   Ko   Betaab   Sa   Rakhta   Tiri    Chaahat    Ka   Nasha

Main   Tiri   Rooh   K   Gulshan   Men   Mahakta   Rehta

Main   Tiray   Jism   K   Aangan   Men   Khanakta   Rehta

Kuchh   Nahen   To   Yahi   Be Naam   Sa    Bandhan   Hota

Kaash   Main   Teray    Haseen   Haath   Ka   Kangan   Hota

 Poet: Wasi   Shah

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -