تیری جانب اگر چلے ہوتے | وصی شاہ |

تیری جانب اگر چلے ہوتے | وصی شاہ |
تیری جانب اگر چلے ہوتے | وصی شاہ |

  

تیری جانب اگر چلے ہوتے 

ہم نہ یوں در بدر ہوئے ہوتے 

ساری دنیا ہے میری مٹھی میں 

کون آئے گا اب ترے ہوتے 

اور اب کیوں نہیں نبھاتے تم 

اتنے وعدے نہیں کیے ہوتے 

پا لیا میں نے ساری دنیا کو 

کوئی خواہش نہیں ترے ہوتے 

اس کی آنکھوں میں بار پانے کو 

کاش ہم خواب بن گئے ہوتے 

شاعر: وصی شاہ

 ( شعری مجموعہ:آنکھیں بھیگ جاتی ہیں؛سال اشاعت،1997)

Teri   Jaanib   Agar   Chalay   Hotay

Ham   Na   Yun   Darbadar   Huay   Hotay

 Saari   Dunya   Hay    Meri   Muthi   Men

Kon   Aaey   Ga   Ab   Tiray   Hotay

Aor   Ab   Kiun   Nahen   Nibhaatay  Tum

Itnay   Waaday   Nahen   Kiay   Hotay

Paa   Liya   Main   Nay   Saari   Dunya   Ko

Koi   Khaahish   Nahen Tiray Hotay

 Uss   Ki   Aankhon   Men    Baar    Paaanay   Ko

Kaash   Ham   Khaab   Ban   Gaeay   Hotay

Poet: Wasi   Shah

 

مزید :

شاعری -رومانوی شاعری -غمگین شاعری -