ماڈل کورٹس نے ایک ہی روز 200 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا لیکن مجموعی طورپر کتنا جرمانہ کیا؟ اعدادوشمار سامنے آگئے

ماڈل کورٹس نے ایک ہی روز 200 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا لیکن مجموعی طورپر کتنا ...
ماڈل کورٹس نے ایک ہی روز 200 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا لیکن مجموعی طورپر کتنا جرمانہ کیا؟ اعدادوشمار سامنے آگئے

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان بھر کی ماڈل کورٹس نے گزشتہ روز مجموعی طورپر 200 مقدمات کا فیصلہ کیا، ماڈل کریمینل ٹرائل کورٹس نے قتل کے 13 اور منشیات کے 54 مقدمات کا فیصلہ سنا دیا۔ تمام عدالتوں نے کل 310 گواہان کے بیانات قلمبند کیے۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق پنجاب میں قتل کے تین،  منشیات کے 10، خیبر پختونخوا میں قتل کے ایک اور منشیات کے18، سندھ میں قتل کے 9 اور منشیات کے 26 مقدمات کا فیصلہ ہوا، دو مجرمان کو سزائے موت ، دو  کو عمر قید جبکہ دیگر 17مجرمان کو 26 سال 08 ماہ 26 دن قید اور 1470000روپے جرمانے کی سزا سنائی گئی۔

ماڈل سول ایپلٹ کورٹس نے مجموعی طورپر 51 دیوانی، فیملی اور رینٹ اپیلوں و درخواست نگرانی کے فیصلے کر دیئے، ماڈل مجسٹریٹس عدالتوں نے 82 مقدمات کے فیصلے کردیے۔ تمام عدالتوں نے 197، گواہان کے بیانات قلمبند کیے، 21 مجرمان کو 18 سال قید اور 47300 روپے جرمانے کی سزا سنادی گئی۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -