کراچی میں موت کے ڈیرے،دھماکوں اورٹارگٹ کلنگ میں 25افرادجاں بحق ،صدر نے نوٹس لے لیا،سیکیورٹی الرٹ ،اجلاس طلب

کراچی میں موت کے ڈیرے،دھماکوں اورٹارگٹ کلنگ میں 25افرادجاں بحق ،صدر نے نوٹس ...
کراچی میں موت کے ڈیرے،دھماکوں اورٹارگٹ کلنگ میں 25افرادجاں بحق ،صدر نے نوٹس لے لیا،سیکیورٹی الرٹ ،اجلاس طلب

  


کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) شہر قائد میں چند گھنٹوں کے اندر دہشتگردی اور ٹارگٹ کلنگ کے مختلف واقعات میں 25بے گناہ افراد جاں بحق اور درجنوں معصوم زخمی ہوگئے۔صدر زرداری نے واقعات کا نوٹس لیتے ہوئے بلاول ہاﺅس کراچی میں امن و امان کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے اعلیٰ سطح کا اجلاس طلب کرلیاہے۔ حیدری کے علاقے میں دو دھماکوں سے تین ماہ کے شیر خوار بچے سمیت سات افراد ہلاک اور 20سے زائد زخمی ہوئے جبکہ بلدیہ ٹاﺅن میں کریکر دھماکے سے چھ افراد شدید زخمی ہوگئے ۔ادھر فائرنگ اورپر تشدد واقعات میں 18 افراد جاں بحق اور متعدد۔پولیس کے مطابق کے ایم سی ورکشاپ پراناحاجی کیمپ کے قریب فائرنگ سے 25 سالہ نوجوان جاں بحق ہوگیا۔ہاکس بے مشرف کالونی میں فائرنگ سے چالیس سالہ جاویدزخمی ہوا جو دوران علاج دم توڑ گیا۔ حسن سکوائر کے قریب فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ہوا۔ آگرہ تاج میں فائرنگ سے دو افراد زخمی ہوئے جو دوران علاج چل بسے ۔مقتولین کی شناخت پچیس سالہ نوید اور پچیس سالہ سلیم کے نام سے ہوئی ہے۔پان منڈی نانک واڑہ کے قریب فائرنگ سے اکرم عرف نہاری والا جاں بحق ہوگیا۔ نارتھ کراچی میں گھر سے ایک شخص کی تشددزدہ لاش ملی ۔ ملیر میمن گوٹھ میں فائرنگ سے دو افراد ہلاک ہوگئے ۔پی آئی بی میں فائرنگ سے حنیف نامی شخص جاں بحق ہوا، ملیر ملت گارڈن میں فائرنگ سے ایک شخص ہلاک اور ایک زخمی ہوا، نارتھ کراچی خواجہ اجمیر نگری میں ایک شخص ہلاک ہوگیا۔گورنر ہاو¿س کے قریب جماعت اسلامی کی ریلی میں فائرنگ سے عبدالواحد جاں بحق ہوگیا۔ بلدیہ نیول کالونی میں فائرنگ سے ایک شخص ہلاک ہوا۔ پرانا گولیمار سے ایک شخص کی لاش ملی ۔ جامعہ کراچی کے قریب گاڑیوں سے بارہ سالہ لڑکی کی لاش ملی ۔ پاک کالونی میں گاڑی پر فائرنگ سے محکمہ تعلیم کا افسر معین خان جاں بحق ہوگیا۔سائٹ ایریا میں چھریوں کے وار سے سی آئی ڈی پولیس اہلکار جانان جاں بحق ہوا۔ادھر صدر آصف علی زرداری نے کراچی میں امن وامان کی بگڑتی ہوئی صورتحال کا نوٹس لے لیا ہے ، اور امن وامان پر اعلیٰ سطح کا اجلاس آج بلاول ہاو¿س کراچی میں طلب کرلیا ہے۔صدر کے نوٹس کے بعد شہرمیں سیکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق صدر آصف علی زرداری رات کو اسلام آباد سے کراچی پہنچ گئے۔ اجلاس میں آئی جی سندھ صدر کو کراچی کی صورتحال اور بلدیہ فیکٹری سانحے پر بریفنگ دیں گے ۔صدر نے اجلاس میں سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے ڈائریکٹرجنرل کو بھی طلب کیا ہے جس میں اس بات کا جائزہ لیا جائے گا کہ کراچی سمیت صوبے میں کتنی ایسی عمارتیں جہاں پرآگ بجھانے کے مناسب انتظامات نہیں اور فیکٹریوں میں محنت کشوں کی زندگیوں کو محفوظ بنانے کیلئے کیا انتظامات ہیں۔صدر زرداری کی جانب سے سندھ حکومت کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ تمام صنعتی زونز اور اہم عمارتوں میں فائرسسٹم کو یقینی بنائیں۔ صدرآصف علی زرداری کوصوبے میں حالیہ سیلاب کی تباہ کاریوں پر بھی بریفنگ دی جائے گی۔

مزید : کراچی /اہم خبریں


loading...