وفاق نے اپنے تحفظات سے عدالت کو آگاہ کرنے کےلئے سات روز کا وقت مانگا ہے ، کائرہ

وفاق نے اپنے تحفظات سے عدالت کو آگاہ کرنے کےلئے سات روز کا وقت مانگا ہے ، ...

اسلام آباد (ثناءنیوز ) وفاقی وزیر اطلاعات قمر زمان کائرہ نے کہا ہے کہ وفاق نے اپنے تحفظات سے عدالت کو آگاہ کرنے کے لئے سات روز کا وقت مانگا ہے ۔ وزراءاعظم کی بار بار عدالت میں پیشی سے میں خوش نہیں ۔ اس معاملہ پر افسردہ ہوں ۔ اداروں کے درمیان کوئی تصادم نہیں ۔ جو لوگ اداروں میں تصادم کا تاثر دے کر اپنی بہتری کر راستے تلاش کر رہے تھے انہیں ناکامی ہوئی ۔ ہم آصف زرداری نہیں صدر کے آفس کے بارے میں یقین دہانی مانگ رہے ہیں ۔ قبل از وقت نہیں بلکہ وقت پر انتخابات ہوں گے ۔ ان خیالات کا اظہار وفاقی وزیر اطلاعات نے وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کی این آر او عملدرآمد کیس میں سپریم کورٹ میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا ۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عدالت کے حکم پر عدالت میں حاضر ہوئے اور انہوں نے عدالت کے سامنے اپنا موقف پیش کرتے ہوئے کہا کہ میں نے پچھلی تاریخ پر عدالت سے گزارش کی تھی کہ وہ مخلصانہ کوشش کریں گے کہ معاملہ حل ہو سکے اور اس پر عدالت نے احکامات دیئے کہ این آر او کیس کے پیرا 178 پر عملدرآمد کے لئے اقدامات کئے جائیں ۔ اس دوران وزیر اعظم نے عدالت سے استدعا کی کہ وفاق کے تحفظات کو دور کرنا بھی عدالت کی ذمہ داری ہے اور ہم وفاق کے تحفظات کو عدالت کے سامنے رکھیں گے ۔ عدالت نے 25 ستمبر کی تاریخ رکھی ہے اس تاریخ پر وزیر اعظم وزارت قانون کو خط لکھنے کے حوالہ سے تحریری خط دیں گے اور یہ خط عدالت میں پیش کیا جائے گا اور پھر اسے فائنل کر کے مزید خط و کتابت کے لئے آگے جائے گا ۔ ہماری حکومت کا پہلے دن سے تہیہ تھا کہ اداروں کے درمیان کوئی تصادم نہیں اور نہ چاہتے ہیں ہم عدالتوں کے اندر اپنے مقدمات لڑنے والے ہیں ۔ عدالتوں سے لڑنے والے نہیں ۔ آج بھی ہم نے عدالت میں اپنے مقدمہ میں رستہ پیدا کیا ہے یہ عدالت کے اطمینان کے مطابق ہے ۔ اگلے مراحل بھی عدالت کے اطمینان کے مطابق ہوں گے یہ معاملہ حل ہو گا ۔ ان کا کہنا تھا کہ عدالت نے قرار دیا کہ کچھ لوگ اداروں کے درمیان تصادم کا تاثر دینے کی کوشش کرتے ہیں اور اسے بڑھانے کی کوشش یا اس کا وجود میں لانے کی کوشش کرتے رہتے ہیں ۔ لیکن ادارے اتنی آسانی سے ان کی باتوں میں آنے والے نہیں ۔ ان لوگوں کی کوششوں کو ناکامی اور مایوسی ہوئی جو اداروں کے تصادم سے اپنی بہتری کے راستے ڈھونڈ رہے تھے ۔ قمر زمان کائرہ نے کہا کہ ہم عدالت کے اطمینان سے آگے بڑھے ہیں ایک سوال پر ان کا کہنا تھا کہ پی پی کارکنوں میں مایوسی نہیں ہوتی ۔ یوسف رضا گیلانی نے اپنا کردار ادا کیا اور اپنی آئینی ذمہ داری نبھائی تھی آج اگر عدالت کے حکم سے تھوڑا سے معاملہ آگے بڑھا ہے اور بہتری کی طرف گیا ہے تو اس کی داد دینی چاہئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...