گورنر پنجاب نے بند روڈ سانحہ کی رپورٹ صدر زرداری کو بھجوا دی

گورنر پنجاب نے بند روڈ سانحہ کی رپورٹ صدر زرداری کو بھجوا دی

لاہور(نمائندہ خصوصی) گورنر پنجاب سردار لطیف کھوسہ نے لاہور میں بند روڈ آتشزدگی کے واقعہ کی رپورٹ میں بالواسطہ واقعہ کی ذمہ داری پنجاب حکومت، ضلعی انتظامیہ اور ٹاﺅن انتظامیہ کو ذمہ دار قرار دے دیا اور تحقیقاتی رپورٹ صدر آصف علی زرداری کو بھجوا دی ۔ آگ کی وجہ شارٹ سرکٹ بتائی گئی ہے تنگ راستہ اور جنریٹر کی داخلی راستے پر تنصیب بھی ہلاکتوں کی تعداد بڑھانے اور امدادی سرگرمیوں کو متاثر کرنے کا باعث بنی۔ ذرائع کے مطابق اس تحقیقاتی رپورٹ کے مرتب کرنے میں ضلعی انتظامیہ نے گورنر پنجاب کی جانب سے مانگی گئی پنجاب حکومت کی تحقیقاتی رپورٹ دینے سے انکار کر دیا جبکہ رپورٹ کے مطابق لیسکو انتظامیہ کو بے گناہ قرار دے دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق آتشزدگی کی نذر ہونے والی فیکٹری، لیبر ڈیپارٹمنٹ، پنجاب سوشل سکیورٹی ڈیپارٹمنٹ اور حکوتم پنجاب سمیت کسی کے پاس بھی رجسٹرڈ نہ تھی۔ پنجاب، ضلعی حکومت اور داتا گنج بخش ٹاﺅن نے واقعہ کے بارے میں گورنر کو معلومات مانگنے پر اپنی تحقیقاتی رپورٹ دینے سے انکار کر دیا۔ گورنر پنجاب سردار لطیف کھوسہ کی طرف سے صدر کو بھجوائی جانے وال رپورٹ میں بالواسطہ واقعہ کی ذمہ داری مسلم لیگ (ن) کی سیاسی قیادت او رپنجاب حکومت کے تحت کام کرنے والے متعلقہ اداروں پر عائد کی گئی۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ فیکٹری کی جگہ انڈسٹری کے لئے موزوں نہیں اور یہ نیگٹو لسٹ میں شامل تھی۔ انڈسٹریل ڈیپارٹمنٹ نے اس ضمن میں اپنے اختیارتا اور ذمہ داری ادا نہیں کی ۔ جگہ کی منظوری، عمارت کا نقشہ سمیت ضروری اقدامات کی ضلعی حکومت اور متعلقہ ٹاﺅن سے منظوری نہیں لی گئی۔ جبکہ رپورٹ میں واضح کیا گیا ہے کہ آتشزدگی کے اس واقعہ میں لیسکو کی کسی قسم کی غفلت یا خلاف ورزی سامنے نہ آئی جبکہ یہ بھی اعتراف کیا گیا ہ کہ گورنر کی طرف سے واقعہ کے بارے میں معلومات کے حصول کے لئے ضلعی حکومت اور متعلقہ ٹاﺅن سے کئی بار رابطہ کیا گیا مگر گورنر کو کسی قمس کی رپورٹ نہیں بھجوائی گئی۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ پنجاب حکومت نے اس علاقے میں عمارتوں کی تعمیر پر طویل عرصے سے پابندی عائد کر رکھی تھی مگر مقامی سیاسی قیادت کی حمایت اور حکوتم پنجاب کے اداروں کی سرپرستی کے باعث یہاں پر غیر قانونی تعمیر ہوئی۔

مزید : صفحہ آخر


loading...