افغان صدر تیسری بار عہدے کیلئے آئین میں تبدیلی نہیں کریں گے

افغان صدر تیسری بار عہدے کیلئے آئین میں تبدیلی نہیں کریں گے

واشنگٹن(اے پی پی) افغانستان میں تعینات سابق امریکی سفیر ریان سی کروکر نے کہا ہے کہ صدر حامد کرزئی تیسری مدت کے لئے صدارتی انتخابات میں حصہ لینے کے لئے ملکی قوانین میں تبدیلی نہیں کریں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز بین الاقوامی امن کے حوالے سے تقریب کے دوران کیا۔ ریان سی کروکر نے کہااش کہ حامد کرزئی کی مدت صدارت 2014ءمیں پوری ہو جائے گی ۔ اگر حالات میں کوئی ڈرامائی تبدیلی نہ آئی تو قوی امکان ہے کہ وہ ایک بارپھر انتخابات میں حصہ لینے کے لئے ملکی آئین میں تبدیلی نہیں کریں گے ۔ اور نہ ہی کوئی ایسا راستہ تلاش کرنے کی کوشش کریں گے جو انہیں پھر عہدے پر قائم رکھنے میں معاون ثابت ہو ۔ ان کا کہنا تھا کہ صدر کرزئی کی مدت صدارت کا خاتمہ اور ایساف فورسز سے مقامی فورسز کو اختیارات کی منتقلی تقریباً ایک ہی وقت میں یکے بعد دیگرے ہوں گے ۔ تاہم صدر کرزئی کی خواہش ہوگی کہ وہ ایسے انتخابات منعقد کرائیں جس میں کامیاب ہونے والا انہیں مزید قومی کردار کے لئے آگے آنے کے لئے نہ کہے۔ یاد رہے کہ صدر حامد کرزئی 2009ءکے انتخابات میں دوسری دفعہ عہدہ صدارت کے لئے منتخب ہوئے تھے تاہم ان کے انتخاب پر مخالفین کی جانب س متعدد الزامات لگائے گئے تھے۔

مزید : عالمی منظر


loading...