مقبوضہ کشمیر :ہائی کورٹ کا ڈاکٹر قاسم فکتو کی رہائی عرضداشت پر فیصلہ

مقبوضہ کشمیر :ہائی کورٹ کا ڈاکٹر قاسم فکتو کی رہائی عرضداشت پر فیصلہ

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میںعدالت عالیہ نے غیرقانونی طورپر نظربند حریت رہنماءڈاکٹر محمد قاسم فکتو کی رہائی کیلئے دائر عرضداشت پر اپنا فیصلہ محفوظ کر لیا ہے ۔کشمیر میڈیا سروس کے مطابق جسٹس منصور احمد میر پر مشتمل ہائی کورٹ کے بینچ نے ڈاکٹر فکتو کے وکیل میاں عبدالقیوم اور سینئر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل اے ایم ماگرے کے دلائل سننے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ کیا ۔ میاں عبدالقیوم نے عدالت کو بتایا کہ ان کا موکل 20برس سے بھی زائد عرصے کی غیر قانونی نظربندی کاٹ چکا ہے جو کہ عمر قید کی سزا کے برابر ہے ۔ انہوںنے کہا کہ 31مئی2012کو ڈاکٹر فکتو کی غیرقانونی نظربندی کو 20برس مکمل ہوچکے ہیںانہوں نے عدالت کو بتایا کہ ڈی آئی جی جیل خانہ جات کی طرف سے ڈی جی جیل خانہ جات کوبھجوائے جانے والے مراسلے میں بھی اس حقیقت کا اعتراف کیا گیا۔عدالت نے دونوں اطراف کے وکلاءکے دلائل سماعت کرنے کے بعد اپنا فیصلہ محفوظ رکھا۔

مزید : عالمی منظر


loading...