”ائیرپورٹ پر دیگچی میں کھوپڑیاں اور پتلون میں کبوتر چھپا کر لیجانے کی کوشش“ ایسی حرکات کہ تفصیلات آپ کو واقعی چکرا کر رکھ دیں

”ائیرپورٹ پر دیگچی میں کھوپڑیاں اور پتلون میں کبوتر چھپا کر لیجانے کی کوشش“ ...
”ائیرپورٹ پر دیگچی میں کھوپڑیاں اور پتلون میں کبوتر چھپا کر لیجانے کی کوشش“ ایسی حرکات کہ تفصیلات آپ کو واقعی چکرا کر رکھ دیں

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) انتہائی سخت سکیورٹی کے باوجود لوگ ایئرپورٹس پر مختلف اشیاءسمگل کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور پھر گرفتار ہو کر سزائیں بھگتتے ہیں۔ ان میں سے منشیات و دیگر ایسی چیزیں سمگل کرنے کی تو سمجھ آتی ہے کہ ملزمان ان کے ذریعے بڑی رقم کمانا چاہتے ہیں اس لیے خطرہ مول لیتے ہیں لیکن بعض مسافر انتہائی مضحکہ خیز چیزیں بھی سمگل کرنے کی کوشش کرتے ہیں جن کا انہیں بظاہر کوئی فائدہ نہیں ہوتا، ماسوائے دلی تشفی کے۔

برطانوی اخبار ”ڈیلی میل“ نے گزشتہ روز ایسی ہی عجیب و غریب چیزوں کے متعلق ایک رپورٹ شائع کی ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ انڈونیشیاءکے کسٹمز حکام گزشتہ دنوں 6انسانی کھوپڑیاں پکڑی ہیں جو مسافر دیگچیوں میں چھپا کر لے جا رہے تھے۔ یہ دیگچیاں 2سوٹ کیسوں میں رکھی گئی تھیں۔ حکام کے مطابق یہ لوگ ریسرچ کے لیے یہ کھوپڑیاں باہر لیجا رہے تھے لیکن یہاں یہ امر بھی قابل غور ہے کہ انسانی کھوپڑیاں جادو میں بھی استعمال ہوتی ہیں۔

ایک موبائل ایپ جو آپ کو بڑے دھوکے سے بچا سکتی ہے

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں سال مارچ میں آسٹریلیا کے میلبرن ایئرپورٹ پر ایک شخص کبوتروں کے 2بچے اور ایک بینگن اپنے پاجامے کے نیچے ڈال کر سمگل کرنے کی کوشش کر رہاتھا۔ کسٹمز حکام کو اس کے سامان سے 2انڈے ملے تھے جس پر انہیں مزید شک ہوا اور انہوں نے اس کی تلاش لی اور 2ننھے کبوتر اور بینگن بھی برآمد کر لیا۔ انہوں نے اس 23سالہ مسافر کو گرفتار کر لیا۔ یہ آسٹریلوی نوجوان مشرق وسطیٰ سے واپس آسٹریلیا پہنچا تھا۔ اس کے پرس سے مختلف قسم کے بیج بھی برآمد ہوئے تھے۔ کسٹمز حکام کا کہنا ہے کہ ہم یہ سمجھنے سے قاصر ہیں کہ یہ شخص ایسی اشیاءکیوں سمگل کر رہا تھا۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ بچے اکثر اپنی کھلونا نما بندوقیں سمگل کرنے کی کوشش کرتے ہیں جو ایئرپورٹ پر ہی ضبط کر لی جاتی ہیں۔ اس کے علاوہ ایک چھوٹے لڑکے کواپنا پالتو کچھوا اپنے زیرجامے میں ڈال کر لے جاتے ہوئے پکڑا گیا۔ 2010ءمیں ایک ماں بیٹی لندن سے برلن جانے والی پرواز پر ایک بوڑھی عورت کی لاش سمگل کر رہی تھیں۔ لاش انہوں نے وہیل چیئر پر بٹھائی ہوئی تھی۔ کسٹمر حکام کے سوال کرنے پر جب لاش نہ بولی تو خواتین کہنے لگیں کہ یہ سو رہی ہیں۔ حکام نے چیک کیا تو وہ مردہ تھی۔اس کے علاوہ ایک بار نیپال کے کٹھمنڈو ایئرپورٹ پر ایک شخص کو مرغا سمگل کرنے کی کوشش میں گرفتار کیا گیا تھا۔

”28 ستمبر کو دنیا ختم ہو جائے گی اور ہم اس کی تیاری کر رہے ہیں“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -