فیفا عہدیدار ایوخینیو فیگریدو کو رشوت لینے کے الزام میں امریکا کے حوالے کرنے کی منظوری

فیفا عہدیدار ایوخینیو فیگریدو کو رشوت لینے کے الزام میں امریکا کے حوالے ...

  

زیورخ(اے پی پی) سوئس حکام نے یوروگوئے سے تعلق رکھنے والے فیفا کے عہدیدار ایوخینیو فیگریدو کو رشوت لینے کے الزام میں امریکا کے حوالے کرنے کی منظوری دے دی۔ ایوخینیو فیگریدو فٹ بال کی عالمی تنظیم فیفا کے ان سات عہدیدران میں شامل ہیں جنہیں رواں برس 7 مئی کو حراست میں لیا گیا تھا۔ سوئٹزر لینڈ کے محکمہ انصاف کے مطابق ایوخینیو فیگریدو پر الزم ہے کہ انہوں نے امریکا میں کوپا ٹورنامنٹ میں لاکھوں ڈالر رشوت لی تھی۔ امریکا کو حوالگی کے فیصلے کے خلاف اپیل کے لیے ان کے پاس 30 دن کی مہلت ہے۔ فیگریدو جنوبی امریکا کی فٹ بال کنفڈریشن اور فیفا کے سابق نائب صدر بھی رہ چکے ہیں۔ سوئس حکام کی طرف سے جاری کردہ بیان میں بتایا گیا ہے کہ فیگریدونے کوپا ٹورنامنٹ کے دوران یوروگوئے کی سپورٹس کمپنی کو 2015، 2016، 2019 اور 2023 میں مارکیٹنگ کے حقوق دینے کے لیے رشوت لی تھی۔ یہ بھی کہا گیا ہے کہ ایوخینیو فیگریدو نے امریکی شہریت کے حصول کے لیے جعلی طبی رپورٹس جمع کروائی تھیں۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -