باٹا پور ، مبینہ طور پر3 پولیس اہلکاروں کا ڈاکوؤں کے روپ میں شہری کے گھر دھاوا

باٹا پور ، مبینہ طور پر3 پولیس اہلکاروں کا ڈاکوؤں کے روپ میں شہری کے گھر دھاوا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نامہ نگار)باٹا پور میں مبینہ طور پر3 پولیس اہلکاروں کا ڈاکوؤں کے روپ میں شہری کے گھر دھاوا،مزاحمت پر مالک مکان کو اٹھا کر چھت سے نیچے پھینک دیا، اہل خانہ زخمی شخص کو گود میں اٹھا کر سیشن عدالت پہنچ گئے۔ایڈیشنل سیشن جج ظفراقبال کی عدالت میں باٹا پور کے محمد افضل کو اہل خانہ نے گود میں اٹھا کر زخمی حالت میں پیش کیا، عدالت کومحمد افضل کی والدہ حنیفاں بی بی نے وکیل بابرعلی کی وساطت سے بتایا کہ وہ اتوکے اعوان کے رہائشی ہیں، تین مسلح افراد رات کے وقت گھر میں داخل ہوئے اور گھر کا سامان اور نقدی اپنے قبضے میں لے لیا ،افضل نے مزاحمت کی تو اس کو اٹھا کر پہلی منزل سے نیچے پھینک دیا جس سے اس کی دونوں ٹانگیں ٹوٹ گئیں وہ پولیس کو اطلاع کرنے تھانے گئے تو معلوم ہوا کہ گھر میں ڈاکوؤں کی طرح داخل ہونے والے پولیس کے اہلکار تھے،ایس ایچ او کو مقدمہ کے لئے درخواست دی مگر اس نے کوئی کارروائی نہیں کی ،مجسٹریٹ کو درخواست دی لیکن اس کے حکم پربھی پولیس نے محمد افضل کا میڈیکل نہیں کرایا ،اب سیشن عدالت انصاف کے لئے آئے ہیں ،عدالت سے استدعا ہے کہ پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دیا جائے۔عدالت نے تھانہ باٹا پور کے ایس ایچ او سے 24گھنٹے میں پورٹ طلب کرلی ہے۔