مساجد اور فورسز پر حملے جہاد نہیں، فوج، حکومت اور عوام بھارت کیخلاف متحد ہو جائیں: حافظ سعید

مساجد اور فورسز پر حملے جہاد نہیں، فوج، حکومت اور عوام بھارت کیخلاف متحد ہو ...

  

لاہور (نمائندہ خصوصی ) جماعت الدعوۃ پاکستان کے امیر پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ پشاور مسجد میں نمازیوں اور فضائیہ کے ایئربیس پر حملہ میں بیرونی ہاتھ ملوث ہے۔مسجدوں اور پاکستانی افواج پر حملے جہاد نہیں فساد ہے۔انڈیا پاکستان کو میدان جنگ بنا کر رکھنا چاہتا ہے۔ فوج، حکومت اور عوام ازلی دشمن کیخلا ف متحد ہو جائیں۔مقبوضہ کشمیر میں گائے ذبح کرنے پر پابندی اور آسیہ اندرابی کیخلا ف بغاوت کے مقدمہ پر حکومتی خاموشی درست نہیں۔عید الاضحی پر کشمیر کے ہر شہر میں ان شاء اللہ قربانی ہو گی۔ وہ جامع مسجد القادسیہ میں نماز جمعہ کے ہزاروں افراد پر مشتمل اجتماع سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر اپنے خطاب میں انہوں نے کہاکہ دہشت گردوں نے پشاور مسجد میں داخل ہو کر نمازیوں کو شہید کیا اور پھر پاک فضائیہ کے ایئر بیس پر حملہ کر دیا ۔ ایسی مذموم کاروائیاں کرنے والے اسلام وجہا دکے نام پر دھبہ اور اللہ کے دشمنوں کی سازشوں کا شکار ہیں۔ پاک فوج اور دفاعی اداروں پر حملے کرنے والے اللہ کے دین کی خدمت نہیں بیرونی قوتوں کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں۔بھارتی و دیگر غیر ملکی ایجنسیوں کو پاکستان میں کسی صورت امن وامان کی صورتحال برداشت نہیں ہے۔وہ پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی سازشوں میں پیش پیش ہیں۔ انہوں نے کہاکہ بھارتی دہشت گردی کا علاج کشمیر کی آزادی ہے ۔حکمرانوں کو یہ بات ذہن میں رکھنی چاہیے کہ دوستیوں سے یہ مسئلے حل نہیں ہوں گے۔ انہیں ملکی سلامتی و خودمختاری کو مدنظر رکھتے ہوئے جرأتمندانہ پالیسیاں ترتیب دینا ہوں گی۔انہوں نے کہاکہ مودی حکومت اسلام وپاکستان دشمنی کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہے۔ انڈیا کی عدالتیں بھی انتہائی متعصبانہ فیصلے کر رہی ہیں اور گائے کے ذبیحہ پر پابندی جیسے فیصلے سنائے جارہے ہیں۔ سری نگر میں سیدہ آسیہ اندرابی نے جرأت کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسی دن گائے ذبح کی جس دن بھارتی عدالت نے ایسا کرنے پر پابندی لگائی اور واضح طور پر کہا کہ یہ فیصلہ طاغوتی ہے ہم اسے مسترد کرتے ہیں جس پر ان کے خلاف بغاوت کا مقدمہ بنا یا گیا اور اب انہیں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ حافظ محمد سعید نے کہاکہ حکومت پاکستان کو فوری طور پر اس واقعہ کا نوٹس لینا چاہیے اور بھارتی سفیر کو بلا کر پوچھنا چاہیے تھا کہ آسیہ اندرابی اور دیگر حریت لیڈروں کے خلاف کس جرم میں بغاوت کے مقدمات درج کئے جارہے ہیں تاہم ایسا نہ کرنا افسوسناک ہے۔ دختران ملت کی سربراہ نے ہندو عدالت کے گائے ذبح کرنے کے فیصلہ کو رد کرتے ہوئے عالم اسلام کے حکمرانوں کو پیغام دیا ہے کہ مظلوم کشمیری مسلمان آٹھ لاکھ بھارتی فوج کی موجودگی میں اللہ کے احکامات پر عمل پیرا ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -