مزنگ ،زمین کاتنازع پر بااثر افراد کا شہری پر تشدد

مزنگ ،زمین کاتنازع پر بااثر افراد کا شہری پر تشدد

  

لاہور(کر ائم سیل)مزنگ میں ریٹائرڈ سرکاری ملازم پر قبضہ گروپ کے افرادکا تشدد، جان سے مارنے کی کوشش ،پولیس نے مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی۔قبضہ گروپ کے افراد نے شاہدرہ کے علاقہ میں میری زمین پر قبضہ کرنے کی کوشش کی تھی جس پر پولیس کی مدد سے میں نے زمین واگزار کرائی لیکن اب وہ رقبہ پر جانے نہیں دیتے ۔ پولیس حکام نے ملزمان کے ساتھ ملی بھگت کر لی ہے ،متاثرہ شخص کو الزام۔نمائندہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے گلبرگ کے رہائشی میاں محمد اعجاز اور اس کے بیٹے نے بتایا کہ سگیاں کے قریب ان کا رقبہ ہے جس پر ملزمان خوشی محمد،محسن علی اور شبیرچغتائی مبینہ طور پر قبضہ کر نا چاہتے ہیں جن کے خلاف ہمارا مقدمہ چل رہا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ ملزمان نے سب سے پہلے جب قبضہ کی کوشش کی تو انہوں نے پولیس کو بلایا گیا ۔پولیس نے قبضہ کو ناکام بنایا اور تین ماہ تک تفتیش کے بعد اراضی ان کو دے دی ۔انہوں نے بتایا کہ ملزمان نے پولیس کے سامنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے معافی بھی مانگی لیکن بعد ازاں انہوں نے سول کورٹ میں مقدمہ کر دیا۔اس ہی مقدمہ کی پیشی کے لیے وہ اظہر حسین گردیزی کی عدالت میں حاضر ہو ا تھا کہ ملزمان نے اس کو گھیر لیا۔ ملزمان میں محسن علی پسٹل کے ساتھ مسلح تھا ، شبیر چغتائی نے انہیں گندی گالیا ں دینے کے بعد پکڑ لیا اور تشدد کا نشانہ بنا یا۔ اس دوران عدالت کے عملہ نے ان کو بچایا ۔اور پولیس کو اطلاع دی جس نے مقدمہ درج کر کے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے۔

مزید :

علاقائی -