”میانمار کے مسلمانوں کی نسل کشی میں اسرائیل کا ہاتھ‘‘

”میانمار کے مسلمانوں کی نسل کشی میں اسرائیل کا ہاتھ‘‘
”میانمار کے مسلمانوں کی نسل کشی میں اسرائیل کا ہاتھ‘‘

  

تہران (ویب ڈیسک) اسرائیلی حکومت میانمار کی فوجی حکومت کو بطور تحفہ ہتھیار دے کر مسلمانوں کے قتل عام میں شریک ہے۔ رپورٹ کے مطابق صیہونی حکومت ایسے عالم میں میانمار حکومت کو بطور تحفہ ہتھیار دے رہی ہے جو خود ہزاروں فلسطینیوں کے قتل میں براہ راست ملوث ہے۔ یاد رہے میانمار کے کے چیف آف آرمی سٹاف مین ہونگ ہالیینگ نے حال ہی میں تل ابیب کا دورہ اور صیہونی فوجی حکام سے ملاقاتیں کی ہیں۔ میانمار اور اسرائیل کے درمیان بڑے پیمانے پر فوجی تعاون اور ہتھیاروں کی فراہمی سے بھی اس بات کی نشاندہی ہوتی ہے کہ اسرائیل میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام اور انسانی حقوق کی پامالی میں ملوث ہے۔ میانمار کے حکام کے دورہ اسرائیل کا مقصد باہمی تعلقات کومضبوط بنانا اور میانمار حکومت کو اسرائیلی ہتھیاروں سے مسلح کرنا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -