کھاریاں کے علاقے سے گیارہ لاکھ سال پرانے ہاتھی کا سر دریافت ہو گیا

کھاریاں کے علاقے سے گیارہ لاکھ سال پرانے ہاتھی کا سر دریافت ہو گیا
کھاریاں کے علاقے سے گیارہ لاکھ سال پرانے ہاتھی کا سر دریافت ہو گیا

  

گجرات (مانیٹرنگ ڈیسک )کھاریاں کے پہاڑی علاقے پبی ہلز سے گیارہ لاکھ سال پرانے ہاتھی کا سر دریافت ہوا ہے جو کہ صر ف امریکہ اور افریقہ میں پایا جاتا تھا ۔تفصیلات کے مطابق پنجاب یونیورسٹی کے زیالوجی ڈیپارٹمنٹ سے تعلق رکھنے والے ریسرچر غیور احمد پبی ہلز کے علاقے میں ڈیڑھ سال سے قدیم جانوروں کے فوسلز ”باقیات“پر تحقیق کر رہے ہیں ۔اس دوران پانچ روز قبل ”میموتھس“کے نام سے جانا جانے والے قدیم ہاتھی کا سر دریافت ہو ا ہے۔ہاتھی کاسر 38سینٹی میٹر لمبا اور 28سینٹی میٹر چوڑا ہے جس کا وزن 120کلو وزنی ہے ۔اس سے پہلے ہاتھی کی اس قدیم نسل کے فوسلز امریکہ اور افریقہ میں دریافت ہو چکے ہیں جس کی وجہ سے ریسرچرز کا خیال تھا کہ یہ ہاتھی صرف انہی جگہوں پر پایا جاتا تھا ۔پنجاب یونیورسٹی سے تعلق رکھنے والے پروفیسر ڈاکٹر محمد اختر نے بتا یا کہ اس ہاتھی کے باقیات سے پتہ چلا یا جائے گا کہ اس ہاتھی کا تعلق اسی علاقے سے تھا یاکہ پھر پانی کے بہاﺅکے ساتھ اس جگہ پر پہنچا ہے ۔پنجاب یونیورسٹی کے زیر اہتمام قدیم جانوروں کی باقیات پر تحقیق جاری ہے جس میں ہر ن اور دیگر جانورں کی باقیات بھی برآمد ہوئی ہے ۔

مزید : سائنس اور ٹیکنالوجی