موضع چکوہا کی بزرگ خاتون حصول انصاف کیلئے ٹھوکریں کھانے لگیں

موضع چکوہا کی بزرگ خاتون حصول انصاف کیلئے ٹھوکریں کھانے لگیں

راولپنڈی( سٹی رپورٹر) موضع چکوہا تحصیل دینہ ضلع جہلم کی رہائشی بزرگ خاتون مریم بی بی بیوہ محمد اشرف حصول انصاف کیلئے در بدر قبضہ مافیا کے سرغنہ مرزا افتخار نے آبائی زمین ہتھیانے کیلئے جینا محال کر دیا ہے دو بیٹے جو محکمہ پولیس میں ملازم ہیں بڑے بیٹے کو عظمت کمال کو ظلم تشدد کا نشانہ بنا کر الٹا جھوٹی ایف آئی آر تھانہ دینہ میں دے کر میرے بیٹے جو کہ پولیس ملازم کے تھانے میں بند کروایا دیا جو زخمی حالت میں موجود ہے ملزمان مرزا افتخاربیگ اس کا بیٹا جابر جو کہ دوہری شہریت کا حامل ہے اس قسم کی وارداتوں کے بعد لندن چلا جاتا ہے اس کے ساتھوں کے خلاف ایف آئی آر 11-10-2018کو درج کرائی ملزمان بااثر ہونے کی وجہ سے پولیس شنوائی نہیں کر رہی اور ملزمان سے مل گئی ہے وزیر اعظم پاکستان عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان، وزیر اعلیٰ پنجاب انصاف دلائیں اور قبضہ مافیا کے خلاف کاروائی کریں گزشتہ روز راولپنڈی پریس کلب میں اپنی فریاد سناتے ہوئے بیوہ خاتون مریم بی بی بیوہ محمد اشرف نے بتایا کہ پہلے والی ایف آئی آر 11-10-2017کو درج کر لی گئی مگر ملزمان کو گرفتار نہیں کیا گیا اب ملزمان نے دوبارہ ہماری آبائی زمین جس کے تمام کاغذات ہمارے نام ہیں مرزاافتخا رولدا فضل الہی اور دیگر 18ملزمان مسلح اسلحہ اور ڈنڈے مبینہ طور پر خسرہ نمبر972، 965-966،24کنال وا واقع جی ٹی روڈ چکوہا اراضی پر قبضہ کرنے کیلئے بلڈوزر لے کر آئے مزاحت پر میرے بیٹے عظمت کمال کو للکارا اور اسے شدید زخمی کر دیا اور اور موٹر سائیکلیں مکمل طور پر تباہ کر دیں الٹا میرے بیٹے کے خلاف ایف آئی آر درج کر ادی جبکہ ہماری شنوائی نہ ہوئی بعد ازاں ملزمان کے خلاف 16-09-2018کو ایف آئی آر درج کرا دی گئی ملزمان مرزا افتخار اس کا بیٹا با اثر ہیں میرے خاندان کو جان کا خطرہ ہے وزیر اعظم پاکستان عمران خان، چیف جسٹس آف پاکستان، وزیر اعلیٰ پنجاب انصاف دلائیں اور قبضہ مافیا کے خلاف کاروائی، مجھے اور میرے خاندان کو تحفظ فراہم کرکے با اثر ملزمان مرزا افتخار اس کے بیٹے اور دیگر 18 ملزمان جو کہ زبردستی ہماری زمین پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں ان کے خاف کاروائی کی جائے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر