راولپنڈی، عشرہ محرم کی مجالس کا سلسلہ ساتویں روز بھی جاری رہا

راولپنڈی، عشرہ محرم کی مجالس کا سلسلہ ساتویں روز بھی جاری رہا

راولپنڈی (سٹی رپورٹر) دین کی سر بلندی اور شریعتِ مصطفوی ؐ کی بقا ء واستحکام کیلئے شہدائے کربلا کی لازوال قربانیوں کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کیلئے راولپنڈی میں عشرہ محرم کی مجالس کا سلسلہ آج ساتویں روز بھی جاری رہا اور مختلف مقامات سے نوشا ہ کربلا حضرت قاسم ابن حسن ؑ کی عظیم قربانی کو سلام عقیدت پیش کرنے کیلئے جلوس مہندی شہزادہ قاسم ؑ برآمد ہوئے ۔راولپنڈی میں مرکزی جلوس مہندی نیا محلہ اور ڈھوک علی اکبر صادق آبادسے برآمد ہوا جس میں ہزاروں سوگواران حسین ؑ نے شرکت کر کے نوحہ خوانی،ماتمداری اور زنجیر زنی کا پرسہ پیش کیا ۔شہر کے دیگر مقامات سے برآمد ہونیوالے جلوس مہندی و علم مرکزی جلوس میں شامل ہوکر قدیمی امامبارگاہ میں رات گئے اختتام پذیر ہوئے۔امام بارگاہ زینبیہ ؑ میں عشرہ محرم کی ساتویں مجلس سے خطاب کرتے ہوئے خطیبہ آل نبی ؐ سیدہ بنت علی موسوی نے کہا کہ میدان کربلامیں حضرت قاسم ؑ نے فوجِ یزید کو کوفہ سے ٹکرا کر اپنے بابا حسن ؑ کی شجاعت یاد دلادی ۔انہوں نے کہا کہ یہ وہ کمسن شہید ہے جس کی لاش زندگی ہی میں پامال ہوگئی اور مظلوم کربلا میت کے بجائے ٹکڑے جمع کرکے خیمے میں لائے جس سے اہل حرم میں کہرام برپا ہوگیا۔انہوں نے کہا کہ نوشاہ کربلا شہزادہ قاسم ابن حسن ؑ کا دین پر جانثار کرنے کا جذبہ نوجوانوں کیلئے بہترین نمونہ عمل ہے۔ تکیہ سائیں عنایت حسین جعفری میں مجلس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ سید قمر حیدر زیدی نے کہا کہ عزاداری ظلم سے نفرت اور مظلوم کی تائید و حمایت کا عالمگیر اعلان ہے جس میں بلا تفریق تمام مسلمان شریک ہوتے ہیں بلکہ غیر مسلم بھی انسانیت کے نجات دہندہ حسین ابن علی ؑ کو نذرانہ عقیدت پیش کر کے غم حسین ؑ مناتے ہیں، مجلس سے علامہ سید وقار حسین نقوی ، مولانا ملک اجلال حیدرالحیدری نے بھی خطاب کیا۔دربار سخی شاہ پیارا میں مجلس سے علامہ سید مطلوب حسین تقی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک بھر میں عزادار قائد ملت جعفریہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی کی جانب سے دیئے جانے والے ضابطہ عزاداری پر کاربند رہتے ہوئے امن و سکون کیساتھ عبادات عزاداری بجا لا سکتے ہیں۔امام بارگاہ زین العابدین میں مجلس شہادت شہزادہ قاسم ابن حسن ؑ ہوئی جس سے مختلف ذاکرات نے خطاب کیا۔ مجلس کے اختتام پر ماتمداری کی گئی۔امامبارگاہ ناصر العزا میں علامہ حافظ تصدق حسین نے مجلس سے خطاب کیا۔امام بارگاہ قصر زینب ؑ پیرگروٹی میں مجلس سے خطاب کرتے ہوئے مولاناملک اجلال حیدری نے کہا کہ شہزادہ قاسم ابن حسن ؑ نے فرمایا کہ موت ہمارے لئے شہد سے زیادہ شیریں ہے۔ انہوں نے کہا کہ قاسم ابن حسن ؑ نے فوج یزید جورجز خوانی کی وہ صحیفہ شجاعت و جوانمردی ہے۔ڈھوک رتہ میں قدیمی جلوس مہندی ملک پرویز حسین کی رہائش گاہ سے برآمد ہوا جو اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا امام بارگاہ کشمیریاں میں اختتام پزیر ہوا ۔چوہڑ ہڑپال میں جلوس مہندی سید غلام حیدر شاہ مرحوم اور سید اقدس کاظمی کی رہائش گاہ سے برآمد ہوا۔راولپنڈی کینٹ کا مرکزی جلوس مہندی شہزادہ قاسم ابن حسن ؑ استاد منگا خان مولائی کی رہائش گاہ سے برآمد ہوا جس میں درجنوں ماتمی دستوں نے حصہ لیا اور پرسہ داری میں حصہ لیا ، شرکائے جلوس نے ڈھوک سیداں چوک میں زبردست زنجیر زنی کر کے نوشاہ کربلا کو خراج عقیدت پیش کیا۔ جلوس مہندی کی قیادت ابراہیم سکاؤٹس اوپن گروپ کا ہر اول دستہ فرائض خدمت پر مامور تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر