بورے والا ، میپکو دفتر پر حملہ ، مقدمہ درج ، کسانوں کا دوبارہ احتجاجی دھرنا

بورے والا ، میپکو دفتر پر حملہ ، مقدمہ درج ، کسانوں کا دوبارہ احتجاجی دھرنا

بورے والا(تحصیل رپورٹر)میپکو دفتر پر حملہ ،توڑ پھوڑ اور ملازمین کو زخمی کرنے کے واقعہ کا مقدمہ درج کرلیا ،پولیس نے ضلعی صدر کسان اتحاد ملک ذوالفقار اعوان سمیت 38نامزد اور(بقیہ نمبر13صفحہ12پر )

400سے زائد نا معلوم افراد کے خلاف انسداد دہشت گردی کے علاوہ دیگر سنگین دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ،تاحال کوئی بھی ملزم گرفتار نہ ہو سکا ،کسانوں نے رات گئے تک ملتان روڈ پر دوبارہ احتجاجی دھرنا دیا ،تفصیلات کے مطابق کسان اتحاد کی جانب سے اپنے مطالبات کے حق میں میپکو کمپلیکس کے سامنے احتجاجی مظاہرے کے بعد گیٹ توڑ کر دفتر کے اندر داخل ہو کر واپڈا ملازمین کو ڈنڈوں اور سوٹوں سے تشدد کا نشانہ بنانے ،کمپلیکس میں کھڑی سرکاری و پرائیویٹ گاڑیوں و موٹر سائیکلوں کی توڑ پھوڑ ،ریکارڈ نذر آتش کیے جانے ،ایکسیئن اور ایس ڈی اوز کے دفاتر کے شیشے اور فرنیچر کی توڑ پھوڑ کرتے ہوئے خوف و ہراس پھیلانے کے علاوہ ملازمین کو جان سے مار دینے کی دھمکیاں دیں ، ایس ڈی او منیر حسین رازی کی درخواست پرتھانہ ماڈل ٹاؤن پولیس نے ضلعی صدر کسان اتحاد ملک ذوالفقار اعوان ،جنرل سیکرٹری مہران علی دیگر حملہ آور ملزمان ،محمد ریاض جملیرا ،ندیم سجاد جٹ ،شہزاد یعقوب گھمن ،نور احمد عرف نورا ،منیر احمد جٹ ،ڈاکٹر طارق سنگھیڑا ،محمد عباس سنگھیڑا ،محمد رمضان ،سیف اللہ گجر ،راشد جاوید ،ارشاد الحق ،محمد بوٹا کھوکھر ،الیاس احمد گل ،رئیس احمد ،محمد یاسین جملیرا ،محمد اسلم کھوکھر ،بصار بھٹی ،محمد عثمان ،رشید احمد ،محمد طیب واہلہ ،طاہر سلیم کھوکھر ،ملک محمد محسن ،نعمان احمد ،مرتضیٰ چوہان ،ننھا جٹ ،شبیر احمد چوہان ،محمد عرب راجپوت ،شاہد رزاق ،رضا فاروق وڑائچ ،محمد اشفاق لنگڑیال ،محمد یار سیال ،دل شیر بلوچ ،مظفر شاہ ،غلام نبی بلوچ ،محمد اکمل ،محمد افضل ،عبدالغفار سمیت 38نامزد جبکہ 400سے زائد نا معلوم حملہ آوروں کے خلاف انسداددہشت گردی ایکٹ ،7ATA،336ت پ ،427ت پ ،342ت پ ،148ت پ ،149ت پ اور 186ت پ کے تحت مقدمہ درج کر لیا اور زخمی اہلکاروں کو میڈیکل رپورٹ کے لیے ٹی ایچ کیو ہسپتال بورے والا منتقل کر دیا اس مقدمہ کے اندراج کے بعد کسی بھی ملزم کی گرفتاری عمل میں نہیں آ سکی جبکہ کسان اتحاد کے ضلعی صدر ملک ذوالفقار اعوان کی قیادت میں گزشتہ شب دوبارہ پی آئی لنک ملتان روڈ پر بھی احتجاجی دھرنا دیا گیا جو 4گھنٹے تک جاری رہا جس میں کسانوں نے واپڈا اہلکاروں کے پتھراؤ سے زخمی ہونے والے کسانوں کا مقدمہ درج کرنے اور ملزمان کی گرفتار ی کا مطالبہ کیا جو کہ پولیس سے مذاکرات کے بعد ختم کر دیا گیا اس واقعہ کے بعد کسان اتحاد نے مرکزی قیادت سے رابطہ کر کے آئندہ لائحہ عمل کے لیے صلاح مشورے شروع کر دیے ہیں ۔

میپکو حملہ

مزید : ملتان صفحہ آخر