لاہورہائیکورٹ نے بغیرفٹنس سرٹیفکیٹ گاڑیوں اورموٹرسائیکل رکشوں پرپابندی عائد کردی

لاہورہائیکورٹ نے بغیرفٹنس سرٹیفکیٹ گاڑیوں اورموٹرسائیکل رکشوں پرپابندی ...
لاہورہائیکورٹ نے بغیرفٹنس سرٹیفکیٹ گاڑیوں اورموٹرسائیکل رکشوں پرپابندی عائد کردی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)غیرقانونی موٹرسائیکل رکشوں کیخلاف کیس کی سماعت میں لاہورہائیکورٹ نے بغیرفٹنس سرٹیفکیٹ گاڑیوں اورموٹرسائیکل رکشوں پرپابندی عائد کر تے ہوئے غیررجسٹرڈموٹرسائیکل رکشہ فیکٹریاں بھی بندکرنے کاحکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق غیرقانونی موٹرسائیکل رکشوں کیخلاف کیس کی سماعت لاہورہائیکورٹ میں ہوئی ۔اس موقع پر سی ای اوٹرانسپورٹ کمپنی عدالت میں پیش ہوئے اور موقف اپنایا کہ 40 ہزارموٹرسائیکل رکشوں کاچالان کیا۔جسٹس علی اکبرقریشی نے ریمارکس دیئے کہ غیرقانونی موٹرسائیکل رکشوں کوبندکیاجائے جس پر سیکریٹری ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ 7 فیکٹریوں کوموٹرسائیکل رکشہ بنانےکی اجازت دی۔عدالت نے استفسار کیا کہ غیرقانونی رکشوں کاصرف چالان کافی ہے؟ غیرقانونی موٹرسائیکل رکشے بند کرکے 27 ستمبرکورپورٹ پیش کریں۔لاہور ہائیکورٹ نے بغیرفٹنس سرٹیفکیٹ گاڑیوں اورموٹرسائیکل رکشوں پرپابندی عائد کر تے ہوئے غیررجسٹرڈموٹرسائیکل رکشہ فیکٹریاں بھی بندکرنے کاحکم دے دیا۔

مزید : قومی /جرم و انصاف /علاقائی /پنجاب /لاہور