’میری بیوی کو ائیرلائن نے جہاز پر نہیں چڑھنے دیا‘ آدمی نے شکوہ کیا تو ائیرلائن کی ملازمہ نے فیس بک پر ایسا شرمناک ترین جواب دے دیا کہ ہنگامہ برپاہوگیا

’میری بیوی کو ائیرلائن نے جہاز پر نہیں چڑھنے دیا‘ آدمی نے شکوہ کیا تو ...
’میری بیوی کو ائیرلائن نے جہاز پر نہیں چڑھنے دیا‘ آدمی نے شکوہ کیا تو ائیرلائن کی ملازمہ نے فیس بک پر ایسا شرمناک ترین جواب دے دیا کہ ہنگامہ برپاہوگیا

  

لندن(نیوز ڈیسک)فضائی سفر کرنے والوں کو بسا اوقات ائیرپورٹ کے عملے یا فضائی عملے کی جانب سے غیر مناسب سلوک کا سامنا کرنا پڑ جاتا ہے۔ عموماً یہ ہوتا ہے کہ اگر کوئی مسافر اپنے ساتھ ہونے والی بدسلوکی کی شکایت کرے تو ائیرلائن اس سے فوری معذرت کرتی ہے اور اس کی شکایت دور کرنے کی ہر ممکن کوشش کی جاتی ہے، مگر معمر برطانوی شہری ڈیوڈ بکبائنڈر نے اپنے ساتھ پیش آنے والے ایک تکلیف دہ واقعے کا ذکر کیا تو جواب ایسا ملا کہ بیچارہ دم بخود رہ گیا۔

میل آن لائن کے مطابق 78 سالہ ڈیوڈ کی چینی نژاد اہلیہ وانگ ژی کو بوجوہ اُن کے ساتھ سفر نہیں کرنے دیا گیا جس کے متعلق انہوں نے میڈیا سے بات کی اور ایک مقامی اخبار نے اس معاملے کو اپنی ایک خبر کا موضوع بھی بنایا۔ اس خبر پر تبصرہ کرتے ہوئے ڈربی شہر سے تعلق رکھنے والی خاتون لارن نے لکھا ”میں شرط لگاسکتی ہوں کہ اس کی اہلیہ دل ہی دل میں یہی چاہ رہی ہو گی کہ اُسے طیارے میں سوار نہ ہونے دیا جائے اور یہ شخص اکیلا ہی سفر کرے۔ میرا مطلب ہے کہ ہر صبح اُٹھ کر اس موٹے تھیلے کا منہ دیکھنا کسی اچھا لگتا ہوگا۔“

اگر چہ ایسی غیر مناسب بات کی توقع کسی بھی تہذیب یافتہ شخص سے نہیں کی جا سکتی لیکن اس انکشاف نے ہر کسی کو حیران کر دیا ہے کہ لارن، جس نے اخبار کی خبر پر افسوسناک تبصرہ کیا، فضائی کمپنی ریان ائیر میں کسٹمر سروس سپروائزر کے طور پر کام کررہی ہے۔

معمر شہری کا کہنا ہے کہ ایک تو ایسٹ مڈلینڈز ائیرپورٹ پر انہیں ائیرلائن کے رویے کی وجہ سے بہت پریشانی کا سامنا کرنا پڑا اور اس پر ائیرلائن کی ایک ملازمہ کی جانب سے اس طرح کے بُرے الفاظ کا استعمال واقعی ان کے لئے بہت دکھ کا سبب بنا ہے۔ میل آن لائن کا کہنا ہے کہ جب اس معاملے پر تبصرے کے لئے ریان ائیر سے رابطہ کیا گیا تو جواب ملا ”کمپنی غیر مصدمہ سوشل میڈیا پوسٹ پر تبصرہ نہیں کرتی۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس