مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہور پولیس کے 5 افسران گرفتار 

مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہور پولیس کے 5 افسران ...
مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہور پولیس کے 5 افسران گرفتار 

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)لاہور پولیس نے کرپٹ اور بد عنوان پولیس افسران کے خلاف گھیرا تنگ کرنے کا عمل شروع کر دیا ،مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہورپولیس کے5افسران گرفتار کرلیے گئے،اختیارات کا ناجائز استعمال، ناقص تفتیش اور شواہد مسخ کرنے پر افسران کے خلاف مقدمات درج کرتے ہوئے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی کے مطابق لاہور پولیس نے کرپٹ اور بد عنوان پولیس افسران کے خلاف گھیرا تنگ کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے ،مقدمات کے اندراج میں تاخیر اور ناقص تفتیش کرنے پر لاہور پولیس کے 5افسران گرفتار کر کے مقدمات درج کر لئے گئے ہیں اور کرپٹ پولیس افسران کو حوالات میں بند کر دیا گیا ہے،سی سی پی او لاہور نے اشہاری ملزمان اور قبضہ گروپوں کو گرفتار کرنے کے لئے افسران کو 31 اکتوبر تک کی ڈیڈ لائن بھی دے دی ہے۔لاہور میں جن پانچ پولیس افسران کے خلاف کارروائی کی گئی ہے ان میں سابق ایس ایچ او گجر پورہ انسپکٹر رضاجعفری کو اختیارات کے ناجائز استعمال پر گرفتار کیا گیا ہے۔ اے ایس آئی عمران احمد، محمد عمران اور شہزاد بٹ کے خلاف شواہد مسخ کرنے پر مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔  اے ایس آئی ارشاد کو غیر ملکی خاتون سے رشوت طلب کرنے پر حوالات میں بند کیا گیا ہے۔ اے ایس آئی ارشاد کو تھانہ باٹا پور میں مقدمہ درج کرکے حوالات میں بند کیا گیا ہے۔کیپیٹل سٹی پولیس آفیسر لاہور عمر شیخ نے کہا ہے کہ اگر کسی بھی پولیس افسر یا اہلکار نے شہریوں کی داد ر سی میں تاخیر کی تو سخت کارروائی ہوگی,افسران مقدمات کی تفتیش میں شواہد کو مد نظر رکھتے ہوئے میرٹ پرچالان لکھیں۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -