اکٹھے نشہ کرنے والے دوستوں میں جھگڑا، ایک نے دوسرے کو مار مار کر نڈھال کردیا، مدد بھی نہ لینے دی، تڑپ تڑپ کر مرگیا

اکٹھے نشہ کرنے والے دوستوں میں جھگڑا، ایک نے دوسرے کو مار مار کر نڈھال کردیا، ...
اکٹھے نشہ کرنے والے دوستوں میں جھگڑا، ایک نے دوسرے کو مار مار کر نڈھال کردیا، مدد بھی نہ لینے دی، تڑپ تڑپ کر مرگیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں ایک آدمی کے قاتل کو 10سال قید کی سزا سنا دی گئی۔دی مرر کے مطابق 58سالہ جیمز ہیمین نامی شخص کو 38سالہ مجرم نیول موریسن نے چند ماہ قبل اس کے اپارٹمنٹ میں بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنا کر مرنے کے لیے صوفے پر چھوڑ دیا تھا۔ جاتے ہوئے مجرم جیمز کا موبائل فون بھی لے گیا تاکہ وہ کسی کو مدد کے لیے بھی نہ بلا سکے۔ اس بے کسی کے عالم میں جیمز ہیمین نے اپارٹمنٹ میں تڑپ تڑپ کر جان دے دی۔

رپورٹ کے مطابق جیمز اور نیول کے درمیان اس خونریز لڑائی کی وجہ ایک خاتون تھی۔ جیمز اور نیول دونوں نشے کے عادی تھے۔ ایک روز قبل وہ مذکورہ خاتون کے ساتھ منشیات استعمال کر رہے تھے کہ اس دوران نشے کی حالت میں جیمز نے خاتون کے ساتھ بدتمیزی کر دی۔ خاتون نیول کی دوست تھی، لہٰذا نیول اگلے روز بدلہ لینے جیمز کے اپارٹمنٹ پر پہنچ گیا۔نیول کو گرفتار کرکے ہُل کراﺅن کورٹ میں پیش کیا گیا تھا جہاں سے گزشتہ روز اسے 10سال قید کی سزا سن اکر جیل بھجوا دیا گیا ہے۔

مزید :

برطانیہ -