ٹکٹیں نہ ملنے سے ناراض امیدوار ووٹ بنک متاثر کریں گے،فرق نہیں پڑے گا،شہری،

ٹکٹیں نہ ملنے سے ناراض امیدوار ووٹ بنک متاثر کریں گے،فرق نہیں پڑے گا،شہری،
ٹکٹیں نہ ملنے سے ناراض امیدوار ووٹ بنک متاثر کریں گے،فرق نہیں پڑے گا،شہری،

  

لاہور(ملک خیام رفیق/نوازسنگرا/الیکشن سیل)پارٹی ٹکٹوں کی تقسیم کی وجہ سے ناراض امیدواروں اور مظاہروں کی وجہ سے مسلم لیگ (ن) اورتحریک انصاف کاووٹ بنک متاثرہوسکتاہے کیونکہ زیادہ تر ووٹ برادری بیس پرکاسٹ کیاجاتاہے ،شہریوں کاکہناہے کہ اگر ان کے پسندیدہ امیدوار کو ٹکٹ نہیںدیاگیاتو ہم ووٹ کاسٹ نہیں کریں گے پاکستان کے سروے میں شہریوں نے ملے جلے ردِ عمل کااظہارکیا، عبدالستارکاکہناتھاکہ ٹکٹوں کی تقسیم کی وجہ سے پارٹیوں کے ووٹ بنک پر کوئی اثر نہیں پڑے گا ،کیونکہ عوام نے تو امیدوار کی بجائے پارٹی کی قیادت کو دیکھناہے کیونکہ پارتی قیادت جس کو ٹکٹ دے گی ہم اس کو ہی ووٹ دیں گے اور اس سے ووٹ بنک پر کوئی اثر نہیں پڑے گا ،عبداللہ کاکہناتھاکہ پارٹی ٹکٹوںکی تقسیم کی کی وجہ سے ووٹ بنک پر اثر پڑے گا کیونکہ عوام اپنے پسندیدہ بندوں کو اقتدار میںلاناچاہتی ہے لیکن پارٹی قیادت صرف پارٹی امیدواروںکو آگے لاناچاہتی ہے جس کی وجہ سے عوام ان کوووٹ کاسٹ نہیں کریں گے ،آصف علی کاکہناتھاکہ ہم نے پارٹی کودیکھناہے،امیدواروں کو نہیں اس لیے ووٹ بنک پرکوئی اثر نہیں پڑے گا ،گنگا خان نے کہا کہ ووٹ بنک پراثرپڑے گاکیونکہ پاکستان میں زیادہ تر ووٹ برادری بیس پر کاسٹ کیاجاتاہے اور اگر پارٹی مخالف امیدوارکوٹکٹ دیتی ہے تو ووٹ بنک پراچھا خاصہ اثر پڑسکتاہے یا وہ دوسری پارٹی میںشامل ہوکراپنی مخالف پارٹی کو جتواسکتے ہیں ،ثنانے کہاکہ ووٹ بنک پراثرپڑسکتاہے لیکن اتنازیادہ نہیں کیونکہ پارٹی قیادت امیدواروں کواعتماد میں لے کرہی ٹکٹ فراہم کرتی ہے ،شیراز گل کاکہناتھاکہ اگرہمارے امیدوار کو ٹکٹ نہ ملا توہم ووٹ کاسٹ نہیں کریں گے ،عبدالغفار کاکہناتھاکہ ہم تو ووٹ ہی کاسٹ نہیں کریں گے کیونکہ ہرکوئی اپنی جیبیں بھرنے آجاتے ہیں لیکن غریب عوام کے بارے میں کوئی نہیں سوچتا،۔علی سلمان کاکہناتھاکہ ٹکٹوں کی تقسیم کی وجہ سے کچھ نہیں ہوگا کیونکہ عوام نے تو پارٹی قیادت کو ووٹ ڈالناہے نہ کہ امیدواروں کوووٹ ڈالناہے اس لیے ووٹ بنک پرکوئی اثر نہیں پڑے گا۔

مزید :

الیکشن ۲۰۱۳ -