چک شہزاد میں واقع فارم ہاﺅس سب جیل قرار،ملزم پرویز مشرف اپنی اہلیہ کے ہمراہ ”قیام“ فرمائیں گے

چک شہزاد میں واقع فارم ہاﺅس سب جیل قرار،ملزم پرویز مشرف اپنی اہلیہ کے ہمراہ ...
چک شہزاد میں واقع فارم ہاﺅس سب جیل قرار،ملزم پرویز مشرف اپنی اہلیہ کے ہمراہ ”قیام“ فرمائیں گے

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اسلام آباد انتظامیہ نے پرویز مشرف کی رہائش گاہ چک شہزاد میں واقع فارم ہاﺅس کو سب جیل قرار دے دیا ہے۔اس سے پہلے انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ججز نظربندی کیس میں سابق صدرجنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کو چودہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دیتے ہوئے چار مئی کو دوبارہ عدالت کے سامنے پیش کرنے کا حکم دیا۔چیف کمشنر اسلام آباد نے فارم ہاﺅس کو سب جیل قرار دینے کانو ٹیفیکشن جاری کر دیا ہے۔ پولیس ہیڈ کوارٹر میں رات گزارنے والے جنرل ریٹائرڈ پرویز مشرف کو سخت سیکیورٹی کے حصار میں انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا گیا۔عدالت آمد کے موقع پر سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئے تھے اور سماعت سے قبل پرویزمشرف کافی دیرتک اپنی گاڑی میں موجودرہے۔سیکیورٹی کلیئرنس ملنے پروہ اپنی حفاظت پر مامور اسلحہ بردار رینجرز اہلکار سمیت کمرہ عدالت میں داخل ہوئے۔ خصوصی عدالت کے جج کوثرعباس زیدی نے کیس کی سماعت شروع کی تو پولیس نے پرویز مشرف کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوانے کی استدعا کی۔ مقدمے کے مدعی اسلم گھمن کی جانب سے چودھری اشرف گجر اور نیازاللہ نیازی ایڈووکیٹ پیش ہوئے اور ملز م پرویز مشرف کوہتھکڑی کے بغیرپیش کرنے پراعتراض کیا۔ انہوں نے کہا کہ آئی جی پولیس اعتراف کر چکے ہیں کہ کیس کی تفتیش درست نہیں ہوئی اس لیے دوبارہ تفتیش کے لیے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل اور ملزم کا جسمانی ریمانڈ دیاجائے۔ پرویز مشرف کے وکیل قمر افضل ایڈووکیٹ نے کہا کہ ججز کی نظربندی کے احکامات پرویز مشرف نے نہیں دیئے تھے۔ انہوں نے عدالت کے سامنے سرنڈر کیا اور ضمانت مسترد ہونے پر اپیل کا حق رکھتے ہیں۔ عدالت نے پرویز مشرف کا چودہ دن کا جوڈیشل ریمانڈ دیتے ہوئے چار مئی کو دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ عدالتی حکم میں کہاگیاہے کہ پولیس ریکارڈ کے مطابق پرویزمشرف کابیان ریکارڈکرلیاگیاہے، تفتیش کے لیے فی الحال ملزم کی مزید ضرورت نہیں۔نجی ٹی وی کے مطابق اڈالہ جیل کا عملہ ،پولیس اور رینجر سیکیورٹی کے ذمہ دار ہوں گے۔ پرویز مشرف کا فارم ہاﺅس کو سب جیل قرار دینے کے بعد جیل کا عملہ اس کو سنبھالے گے۔سب جیل میں ان کی اہلیہ بھی اُن کے ساتھ رہیں گی لیکن وہ آرام سے اند پاہر آ جا سکتی ہیں۔ اُن کے ساتھ ان کی ذایتٰ سیکیورٹی بھی موجود ہو نگی۔

مزید :

اسلام آباد -اہم خبریں -