اب ”اندھے“ الیکشن کرائیں گے۔۔۔

اب ”اندھے“ الیکشن کرائیں گے۔۔۔
اب ”اندھے“ الیکشن کرائیں گے۔۔۔

  

شیخوپورہ (مانیٹرنگ ڈیسک) انتخابات کیلئے ایک نابینا اسسٹنٹ پروفیسر کو پریذائیڈنگ آفیسر تعینات کر دیا گیا ، تقرری کے نوٹی فکیشن میں یہ کہا گیا ہے کہ اگر ڈیوٹی دینے سے انکار کیا تو پیڈا ایکٹ کے تحت ملازمت سے نکال دیا جائیگا۔نجی ٹی وی کے مطابق سفید چھڑی کے سہارے سڑکوں پر چلتے گورنمنٹ پوسٹ گریجویٹ کالج شیخوپورہ کے اسسٹنٹ پروفیسر عمر دراز ڈوگرکو ریٹرننگ آفیسر شیخوپورہ کی جانب سے نوٹی فکیشن موصول ہوا جس کے مطابق درس و تدریس کے شعبے سے وابستہ عمر دراز ڈوگر کو شیخوپورہ کے ایک پولنگ اسٹیشن کا انچارج مقرر کردیا گیا۔نوٹیفکیشن میں ان کے نام کے ساتھ بلائنڈ یعنی نابینا بھی لکھا ہوا تھا، اس کے باوجود حساس انتخابی ڈیوٹی عمر دراز ڈوگر کو پریشان کر گئی ، عمر دراز اپنی پریشانی لے کر لاہور الیکشن کمیشن پیش ہوئے تو ٹکا سا جواب ملا کہ اب آپ کی ڈیوٹی صرف ریٹرننگ افسر شیخوپورہ ہی ختم کر سکتا ہے۔ عمردراز ڈوگر کو اندر ہی اندر یہ پریشانی ضرور ہے کہ آنکھوں کے بغیر وہ اپنی انتخابی ڈیوٹی کیسے ادا کر پائے گا۔ اسسٹنٹ پروفیسر عمر دراز ڈوگر کا کہنا ہے کہ اگر آنکھوں والوں کو ان کا نابینا پن نظر نہیں آیا تو کیا ہوا وہ حکم کی بجا آوری میں پریذائیڈنگ آفیسر کے فرائض انجام دینے کو تیار ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -