پنجاب ہائیر ایجو کیشن کمیشن میں وائس چانسلرز کی ’’فروغ امن کا نفرنس‘‘ کا آغاز

پنجاب ہائیر ایجو کیشن کمیشن میں وائس چانسلرز کی ’’فروغ امن کا نفرنس‘‘ کا ...

لاہور ( ایجوکیشن رپورٹر ) پنجاب ہائر ایجو کیشن کمیشن کے ورکنگ گروپ برائے فروغ امن کانفرنس کے زیر اہتمام دو روزہ فروغ امن کا نفرنس کا آغاز ہوگیا جس میں چیئر مین پنجاب ایچ ای سی ڈاکٹر محمد نظام الدین سمیت صوبہ بھر کی 27جامعات کے وائس چانسلرز اور ڈائر یکٹر سٹوڈ نٹس افیئرز نے خصو صی شرکت کرتے ہوئے یونیورسٹی میں پائیدار امن کے حوالے سے تفصیلی بات چیت کی، اس کانفرنس میں وائس چانسلر اسلامیہ یونیو رسٹی بہا ولپور ڈاکٹر قیصر مشتاق ، وائس چانسلر یونیورسٹی آف گجرات ڈاکٹر ضیا ء القیوم ، وائس چانسلر گورنمنٹ کا لج یونیورسٹی لاہور ڈاکٹر حسن امیر شاہ ، وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسسز لاہور ڈاکٹر جنید سرفراز، ودیگر نے شرکت کی۔

وائس چانسلر گورنمنٹ کا لج یونیورسٹی فیصل آباد ڈاکٹر محمد علی شاہ ، وائس چانسلر کنئیر ڈ کالج فار وویمن ڈاکٹر رخسانہ ڈیوڈ ، وائس چانسلر یونیورسٹی آف ویٹرنری اینڈ اینمل سائنسسز ڈاکٹر طلعت نصیر پاشا، وائس چانسلر لاہور کالج فار وویمن یونیو رسٹی ڈاکٹر رخسانہ کوثر، وائس چانسلر گورنمنٹ کالج ویمن یونیورسٹی فیصل آباد پروفیسر ڈاکٹر نورین عزیز، وائس چانسلر محمد نواز شریف انجینئر نگ یونیورسٹی ملتان ڈاکٹر محمد زبیر، وائس چانسلر گورنمنٹ صادق کالج ویمن یونیورسٹی بہا ولپور پروفیسر ڈاکٹر طلعت افزا اور تعلیمی ماہرین نے شرکت کی۔ کانفرنس کا مقصد جامعات میں امن رواداری اور برداشت کے کلچر کا فروغ ہے ۔کانفرنس کے صدارتی خطبہ میں چیئر مین پنجاب ہائیر ایجو کیشن کمیشن ڈاکٹر محمد نظام الدین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جامعات میں امن اور رواداری کے فروغ کیلئے ٹھوس حکمت عملی تشکیل دی جائے ، جامعات میں ڈھانچہ جاتی بہتری کی ضرورت ہے ۔ انکا کہنا تھا کہ پنجاب کی جامعات کو پرامن بنا نے کیلئے سات سینئر ماہرین پر مشتمل ورکنگ گروپ کا قیام کیا گیا ہے جسکا مقصد جامعات میں تحمل برداشت اور رواداری کے کلچر کا فروغ ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ جامعات میں سٹو ڈنٹس سو سائیٹیز کے قیام کی حوصلہ افزائی کرنی چاہئے تاکہ طلبہ کو ملکی اور بین الا قوامی معاملات پر مثبت انداز میں رہنمائی دی جا سکے اور جامعات میں تشدد اور نقص امن کے خطرات سے نمٹا جا سکے ۔ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کنونئیر ورکنگ گروپ اور وائس چانسلر ایجو کیشن یونیورسٹی لاہور ڈاکٹر رؤ ف اعظم کا کہنا تھا کہ جامعات میں امن کیلئے طلبہ کی کردار سازی اہم جزو ہے ، طلبہ کے مابین باہمی ہم آہنگی اور برداشت کا کلچر عام کرکے تشد دسے چھٹکارا حاصل کیا جاسکتا ہے ۔ جامعات کے سربراہان پر جامعات میں امن کی فضا قائم کرنے کیلئے بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے ، تعصبات سے باہر نکل کر جامعات کو امن کا گہوارہ بنانا ہوگا۔وائس چانسلر لاہور کالج فار ویمن یونیو رسٹی داکٹر رخسانہ کوثر کا کہنا تھا کہ طلبہ کو معاشرے کا کار آمد شہری بنا نے کیلئے احساس ذمہ داری بیدارکرنے کی اہم ضرورت ہے ۔ کثیر الجہتی ثقافت کے فروغ سے انتہا پسندی کا خاتمہ ممکن ہے ۔ جامعات امن کا گہو ارہ اور اخلاقی تربیت کا بہترین ذریعہ ہیں ۔ ڈین سوشل سائنسسز جی سی یونیورسٹی لاہور ڈاکٹر طاہر کامران نے اپنے کلیدی میں خطاب میں کہا کہ جامعات میں عدم برداشت اور نظریاتی اختلاف نے تعلیمی ماحول کو تباہ کیا ۔ کانفرنس دو دن جاری رہے گی جس میں امن وبرداشت پر مختلف مجلسوں کا اہتمام کیا جائے گا ۔کانفرنس کے اختتام پر مشترکہ تجاویز پیش کی جائیں گی جس کو کریکولم اور پالیسی کا حصہ بنایا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...