مانگا منڈی کے پٹواری اور 9پولیس افسروں کے وارنٹ گرفتار ی جاری

مانگا منڈی کے پٹواری اور 9پولیس افسروں کے وارنٹ گرفتار ی جاری

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے دو جوڈیشل مجسٹریٹ نے فراڈ کے مقدمہ میں بطور گواہ پیش نہ ہونے پرمانگا منڈی پولیس کے 4افسروں اور موضع مانگا منڈی کے پٹواری جبکہ چوری کے مقدمہ میں بطور گواہ پیش نہ ہونے پرتھانہ شیراکوٹ کے 5پولیس افسران کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرکے آج 20اپریل کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔پہلے مقدمہ میں جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل کے روبرو ملزم محمدرمضان کے خلاف فراڈ اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے کے مقدمہ کی سماعت شروع ہوئی توعدالت کو بتایا گیا کہ ملزم ہر تاریخ پیشی پر عدالت حاضر ہورہا ہے مگر پراسکیوشن کے گواہ موضع مانگا منڈی کے پٹواری محمد اسلم ، تھانہ مانگا منڈی کے اے ایس آئی ذوالفقار، بشیر احمد، فلک شیر اور محمد وارث مسلسل عدالتی طلبی کے باوجود پیش نہیں ہو رہے جس سے مقدمہ التواء کا شکار ہو رہا ہے جس پرفاضل جج نے متعلقہ تھانے کے ایس ایچ او کو پراسکیوشن کے تمام گواہوں کی گرفتاری کا حکم دیتے ہوئے آج پیش کرنے کاحکم دیا ہے،علاوہ ازیں جوڈیشل مجسٹریٹ مجتبیٰ الحسن کے روبرو ملزم سید جبران علی کے خلاف چوری کے کیس کی سماعت ہوئی۔ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ملزم سید جبران ہر تاریخ پیشی پر عدالت میں حاضر ہو رہا ہے مگر پراسکیوشن کے گواہوں کی عدم پیشی کے باعث مقدمہ زیر التواء ہے۔عدالتی استفسار پر پراسکیوٹر نے عدالت کو آگاہ کیا کہ چوری کے مقدمہ میں شیرا کوٹ کے سب انسپکٹر امجد علی اور غلام فرید ، اے ایس آئی شفیق عباس، کانسٹیبل کرامت علی اور محمد ارشد گواہ ہیں۔عدالت نے تھانہ شیرا کوٹ مذکورہ پانچوں پولیس اہلکاروں ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے ایس ایچ او کو گواہوں کو آج20اپریل کو پیش کرنے کاحکم دیاہے۔

مزید : علاقائی