جنگی بحری جہازوں کی شمالی کوریا کی جانب پیش قدمی کی خبر درست نہیں، امریکہ

جنگی بحری جہازوں کی شمالی کوریا کی جانب پیش قدمی کی خبر درست نہیں، امریکہ

واشنگٹن ( نیٹ نیوز)اطلاعات کے مطابق امریکہ کے ایک طیارہ بردار بحری جہاز اور دیگر جنگی بحری جہازوں کی شمالی کوریا کی جانب پیش قدمی کی خبر درست نہیں تھی بلکہ اس ’بیڑے‘ نے تو جزیرہ نما کوریا کی مخالف سمت سفر کیا تھا۔گذشتہ ہفتے امریکی صدر ٹرمپ نے اپنی ایک ٹویٹ میں ’بیڑا‘ روانہ کرنے کی بات کی تھی۔امریکی بحریہ نے آٹھ اپریل کو کہا تھا کہ طیارہ بردار جہاز یو ایس ایس کارل ونسن کے سٹرائیک گروپ نے دفاعی اقدام کے طور پر جزیرہ نما کوریا کی جانب سفر کیا تھا۔لیکن یہ گروپ دراصل اختتام ہفتہ پر وہاں سے کافی دور تھا، وہ ہرمز سنڈا سے بحرِ ہند جا رہا تھا۔ 'شما امریکہ کا اب کہنا ہے کہ اسے آسٹریلیا کے ساتھ ٹریننگ مکمل کرنی ہے۔امریکی پیسیفک کمانڈ نے کہا کہ ان کا سٹرائیک گروپ اب حکم کے مطابق مغربی بحرِ ہند کی جانب سفر کر رہا ہے۔اس سے پہلے اتوار کو شمالی کوریا کے میزائل پروگرام پر خدشات میں اضافے کے باعث امریکی فوج نے بحریہ کے سٹرائیک گروپ کو کوریائی خطے کے جانب پیش رفت کا حکم جاری کیا تھا۔

مزید : علاقائی