ہیوی بیڈ فورڈ گاڑیاں ختم کر کے چین سے لاکھوں نئی گاڑیاں منگوائی جائینگی

ہیوی بیڈ فورڈ گاڑیاں ختم کر کے چین سے لاکھوں نئی گاڑیاں منگوائی جائینگی

لاہور(اسد اقبال سے)وفاق کی جانب سے سی پیک منصو بہ میں باربر داری کے لیے گڈز ٹرانسپورٹ کا پرانا نظام ختم کر کے نیا نظام متعارف کروایا جا رہا ہے جس کے تحت ملک بھر میں چلنے والی لاکھوں ہیوی بیڈ فور ڈ گاڑیاں ختم کر کے چائینہ سے نئی ہیوی ڈیو ٹی گاڑیاں منگوائی جائے گی ۔اس امر کا فیصلہ اسلام آباد میں ہونے والے اعلی سطحی اجلا س میں کیا گیا جس میں نئے ٹرانسپورٹ سسٹم کی منظوری بھی دی گئی ہے دوسر ی جانب گڈز ٹرانسپورٹ ایسوسی ایشن نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے حکومت کے اس اقدام کو لاکھوں ٹرانسپورٹروں کا معاشی قتل قرار دیا ہے جبکہ بند کمروں میں بنائی گئی پالیسی کی بھر پور مذمت کی ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ حکومت مقامی گڈزسیکٹرکو تباہ ہونے سے بچائے اور سی پیک میں بار برداری کا مثبت کردار ادا کر نے کے لیے سٹیک ہو لڈرز اور منتخب نمائندوں سے مشاورت کر ے۔ باوثوق ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے نئی روڈ سیفٹی پالیسی اور سی پیک میں باربرداری کا نظام تبدیل کر نے کے لیے چائینہ سے لاکھوں ہیوی ڈیو ٹی گاڑیاں منگوانے کا فیصلہ کر لیا ہے جس کے لیے وزیر اعظم کو مراسلہ بھجوا دیا گیا ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں باربرداری کے لیے پرانی بیڈ فورڈ گاڑیوں کو ختم کر تے ہوئے چائینہ سے لوڈر گاڑیا ں درآمد کر کے سی پیک منصو بہ کو بہتر بنا یا جا سکتا ہے ۔واضح رہے کہ اس حوالے سے محکمہ ٹرانسپورٹ اور وفاقی حکومت کے کسی نمائندے نے سٹیک ہولڈر یا منتخب عہدیداران کو اعتماد میں نہ لیتے ہوئے از خود فیصلہ کر دیا ہے۔روزنامہ پاکستان سے گفتگو کر تے ہوئے پاکستان گڈزٹرانسپورٹ ایسو سی ایشن کے جنرل سیکرٹری نبیل محمو د طارق نے کہا کہ ملک بھر میں اس وقت 15لاکھ سے زائد بیڈ فورڈ ہیوی گاڑیاں ملک بھر میں باربرداری کا نظا م احسن طریقہ سے سر انجام دے رہے ہیں ۔جس سے ڈائریکٹ اور ان ڈائریکٹ 70لاکھ سے زائد افراد اس روزگار سے وابستہ ہیں اور بیشتر ٹرانسپورٹرز ایسے ہیں جنہوں نے بنکوں سے قرضے اور اقساط پر بیڈ فور ڈ گاڑیاں تیار کر کے کاروبار کر رہے ہیں حکومت کی جانب سے سی پیک منصوبہ کی آڑ میں چائینہ اور پاکستان کے کئی ایک اعلی افراد کو نوازنے کے لیے حکومت نے چائینہ سے لوڈر گاڑیاں منگوانے کا فیصلہ کیا ہے جس کی بھر پور مذمت او ر وقت آنے پر احتجاج کر یں گے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر حکومت نے کوئی نئی ٹرانسپورٹ پالیسی بنانی ہے تو اس کے لیے سٹیک ہولڈرز اور چاروں صو بوں کے منتخب گڈز ٹرانسپورٹ عہدیداران سے مشاورت یقینی بنائے ۔

چینی گاڑیاں

مزید : علاقائی