ہائیکورٹ کا شہید کانسٹیبل کی بیٹی کو شہداء کوٹے کے تحت نوکری دینے کا حکم

ہائیکورٹ کا شہید کانسٹیبل کی بیٹی کو شہداء کوٹے کے تحت نوکری دینے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )ہائیکورٹ نے شہید کانسٹیبل کی بیٹی کو شہداء کوٹے کے تحت نوکری دینے کا حکم دیتے ہوئے درخواست نمٹا دی۔جسٹس محمد قاسم خان نے زرینہ بی بی کی درخواست پرسماعت کی۔درخواست گزار کی جانب سے وکیل نے موقف اختیارکیا کہ اس کے والد محمد باقردوران ڈیوٹی شہید ہوئے،والد کی شہادت کے وقت ان کی بیٹی کی عمر کم تھی جبکہ والد کی شہادت کے 17برس بعد بیٹی کے بالغ ہونے کے باوجود اسے شہید کوٹے کے مطابق نوکری نہیں دی جا رہی۔انہوں نے بتایا کہ اس کی والدہ کی رضا مندی کے بغیر اس کے رشتہ داروں کوپولیس میں ملازمتیں دے دی گئیں مگراسے محروم رکھا گیا، محکمہ پولیس کا یہ اقدام حکومتی پالیسی سے متصادم ہے۔سرکاری وکیل نے بتایا کہ شہید کانسٹیبل کے دو بھانجوں کو نوکری پر رکھا گیا تھا،درخواست ناقابل سماعت ہے۔عدالت نے ریمارکس دیئے کہ پالیسی کے تحت جس کا حق ہے اسے نوکری کیوں نہیں دی گئی؟،یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ حق دار عدالتوں میں دھکے کھاتے رہیں۔عدالت نے شہید کانسٹیبل کی بیٹی کو 15یوم میں شہداء کوٹے کے تحت نوکری دینے کا حکم دیتے ہوئے درخواست نمٹا دی

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...